امریکا میں مذہبی منافرت، مشی گن کے اسپتال میں مسلمان لڑکی پر تشدد


 امریکا( 24 نیوز ) امریکی ریاست مشی گن کے اسپتال میں ایک شخص نے مسلمان لڑکی کو تشدد کا نشانہ بناڈالا۔ لڑکی حجاب پہنے اسپتال ایمرجنسی کے کاؤنٹر پر کھڑی تھی کہ پیچھے سے ایک امریکی شخص نے آکر اسے مارنا شروع کردیا۔

  24 نیوز ذرائع کے مطابق امریکی ریاست مشی گن کے اسپتال میں ایک شخص نے19 سالہ مسلمان لڑکی کوتشدد کا نشانہ بناڈالا۔ لڑکی حجاب پہنے اسپتال ایمرجنسی کے کاؤنٹر پرکھڑی تھی اور کچھ معلومات لے رہی تھی کہ پیچھے سے ایک امریکی شخص نے آکر اسے مارنا شروع کردیا۔

یہ بھی ضرور پڑھیں :مقبوضہ وادی کشمیر لہو لہو، بھارت کا وحشیانہ ظلم و بربریت جاری

پولیس نے 57 سالہ امریکی شخص کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا۔ مسلم لڑکی نے اسپتال کے خلاف بھی مقدمہ درج کرادیا ہے کہ اسپتال انتظامیہ نے حملہ آور کو روکنے کے خاطر خواہ انتظامات نہیں کئے۔

 یہ پڑھنا مت بھولیں: چین کا خلائی اسٹیشن خلا میں بے قابو، جلد ہی زمین سے ٹکرائےگا

دوسری جانب متاثرہ لڑکی کے وکیل کا کہنا ہے کہ ان کی موکل کا اعتماد بلکل ٹوٹ چکا ہے۔ وہ ہر وقت خوفزدہ رہتی ہیں۔ انھیں یہی لگتا ہے کہ ابھی کوئی پیچھے سے آکر انھیں مارنے لگے گا۔