حج پالیسی،سینیٹرز نے حکومت پربرس پڑے


اسلام آباد(24نیوز)ارکان سینیٹ نے حج اخراجات میں اضافہ کو حاجیوں پر ڈرون حملہ قراردیدیا، اپوزیشن نے حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا،کہاکہ عازمین کو حج سے روکنے کی کوشش کی گئی، چیئرمین سینیٹ نے وزیر خزانہ کو حج پر سبسڈی دینے کی ہدایت کردی۔

سینیٹ کا اجلاس چیئرمین صادق سنجرانی کی زیرصدارت ہوا۔جماعت اسلامی کے سینیٹر مشتاق احمد حج اخراجات میں اضافے پر توجہ دلاؤ نوٹس پیش کرتے بولے کہ رواں برس حج اخراجات میں 1 لاکھ 76 ہزار اضافہ کیا گیا۔ رواں برس قربانی کے اخراجات ملا کر 4 لاکھ 56 ہزار حج اخراجات آئیں گے۔

سینیٹر مشتاق احمد کاکہنا ہے کہ گزشتہ حکومت کے دور میں حج اخراجات دولاکھ اسی ہزار روپے تھے۔حکومت حج کو مہنگا کرکے حاجیوں کی بددعائیں نہ لے۔ حج اخراجات کو دو لاکھ اسی ہزار روپے تک ہی رکھا جائے۔

وزیر پارلیمانی امور علی محمد خان نے حج اخراجات میں اضافہ پر وضاحت پیش کرتے ہوئے کہا کہ حج کے 70 فیصد اخراجات سعودی عرب میں پہلے ادا کیے جاتے ہیں جن پر حکومت کا کوئی کنٹرول نہیں،سعودی عرب نے سفر، رہائش اور کھانے پینے کے اخراجات میں اضافہ کیا ،حکومت کی کوشش ہے حج سے پہلے حاجیوں کو ریلیف فراہم کیا جائے۔