نئے سال، مہنگائی میں اضافے کی رفتار مزید تیز

نئے سال، مہنگائی میں اضافے کی رفتار مزید تیز


اسلام آباد (24 نیوز)نئے سال میں مہنگائی میں اضافے کی رفتار مزید تیز ہو گئی، پہلے ماہ ہی مہنگائی کی شرح 7.2 فیصد تک پہنچ گئی،  چینی چائے، چاول، گوشت، دالیں کوکنگ آئل مہنگا، بجلی ،گیس اورپانی کےساتھ تعلیم بھی مہنگی ہو گئی۔

 پاکستان ادارہ شماریات کے مطابق جنوری میں مہنگائی کی اوسط شرح 7.2 فیصد تک پہنچ گئی جو گزشتہ سوا چار سال کی بلند ترین سطح ہے،  پچھلےسال جنوری میں یہ شرح 4.4 تھی،  جنوری میں مہنگائی کی دوڑ میں ٹماٹر نے سب کو پیچھے چھوڑ دیا،  قیمت 28 فیصد بڑھ گئی،  گوشت، چائے، چینی، مصالحہ جات، دال مونگ، دال چنا، چاول،  کوکنگ آئل، خشک دودھ کی قیمت گزشتہ سال سے 16 فیصد تک زیادہ رہیں جبکہ نان فوڈ آئٹمز میں گیس کی قیمت گزشتہ سال سے 85 فیصد زیادہ ہو گئی۔

ٹرانسپورٹ، بجلی، پانی،  کاسمیٹکس،  تعمیراتی سامان 18 فیصد تک مہنگا ہو گیا،  تعلیمی اخراجات دس فیصد بڑھ گئے، رپورٹ کےمطابق جنوری کے دوران کھانے پینے اور روزمرہ استعمال کی 89 بنیادی اشیا اور سروسز میں سے 81 گزشتہ سال سے مہنگی رہیں، صرف 9 کی قیمت میں کمی دیکھی گئی،  رواں مالی سال کے پہلے سات ماہ کے دوران مجموعی طور پر مہنگائی کی اوسط شرح 6.2 فیصد رہی،  جو گزشتہ سال اس عرصے میں 3.8 فیصد تھی۔

Malik Sultan Awan

Content Writer