"نیب ہرکیس میرٹ کی بنیاد پر دیکھ رہا ہے"



اسلام آباد ( 24 نیوز ) چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈجاوید اقبال کا کہنا ہے کہ اگر پلی بارگین نہ ہوتا تو جو رقم آج تک ریکور کی گئی وہ کوئی ادارہ واپس نہیں لاسکتا تھا، نیب ہرکیس میرٹ کی بنیاد پر دیکھ رہا ہے،جہاز اورٹرین انجن غائب ہوں گےتو نیب ایکشن لے گا۔

نیب ہیڈکوارٹراسلام آباد میں نیب راولپنڈی کی جانب سے ہاؤسنگ سوسائٹیز کے متاثرین میں چیک تقسیم کرنے کی تقریب ہوئی، تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین نیب جسٹس (ر)جاویداقبال کا کہنا تھا کہ بدعنوانی اور بدعنوان عناصر تمام برائیوں کی جڑ اورملکی ترقی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہیں، کرپشن کا خاتمہ نیب کی اولین ترجیح ہے، جاوید اقبال نے کہا کہ کی نیب کی موجودہ قیادت نے میگاکرپشن کیسز کو الماریوں سےنکالا، میرٹ اور قانون کے مطابق کیسز کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔

چیئرمین احتساب بیوروکا کہنا تھا کہ نیب کیخلاف منظم اور جارحانہ پروپیگنڈہ کیا جا رہا ہے، تنقید کرنے والوں کو آئین وقانون اور نیب لاء کا علم ہی نہیں، سپریم کورٹ قانون کی تمام جزئیات کا جائزہ لے چکی ہے، سپریم کورٹ نے نیب قانون کو نہ غیر آئینی کہا اور نہ ڈریکونین لاء کہا,  جسٹس (ر) جاوید اقبال نے مزید کہاکہ پلی بارگین پر بہت سے لوگ تنقید کرتے ہیں اگرپلی بارگین نہ ہوتاتو جو رقم آج تک ریکور کی گئی ہے پاکستان کا کوئی ادارہ واپس نہیں لاسکتا تھا۔