نئے سال کے آغاز پر فوادچودھری کا بڑا اعتراف



اسلام آباد( 24نیوز )وزیرسائنس اینڈٹیکنالوجی فوادچودھری کاغلطیوں کےاعتراف کےساتھ نئےسال کاآغاز کیا، فوادچودھری نےسینیٹ میں کہاکہ حکومت،عدلیہ اورفوج سب سے غلطیاں ہوئیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری  نےسینیٹ  میں اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہرکسی سےکوئی نہ کوئی غلطی ہوتی ہے،غلطیوں کےاعتراف کرتے ہوئے ان کاکہناتھا کہ حکومت،عدلیہ اورفوج سب سے غلطیاں ہوئیں،حکومت اور اپوزیشن کوفاصلے کم کرناہوں گے،آئین ہمیں بتاتاہےملک اوراداروں کوکیسےچلناہے۔

وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے سینیٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پچھلے سال کافی ہلا گلا رہا، نئے سال کا آغاز مختلف کرنا چاہتے ہیں،بدقسمتی سے حکومت اور اپوزیشن ایک پیج پر نہیں،سوچنے کی ضرورت ہے نوجوانوں کو بہتر مستقبل کیسے دے سکتے ہیں، جمہوریت میں اتفاق رائے کی ضرورت ہوتی ہے ۔

وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا کہناتھا کہ حکومت اور اپوزیشن کے درمیان تلخیاں موجود ہیں،حکومت اور اپوزیشن میں الیکشن کمیشن کے اوپر اتفاق رائے ہو سکتا ہے ، عدلیہ کا بہت احترام کرتا ہوں ،آئین میں لکھا ہے کہ وزیراعظم کا بھی احترام کرنا چاہیے،پارلیمان کے ادارے حکومت اور اپوزیشن ہی۔

ان کامزید کہنا تھا کہ معاملات کو آگے بڑھانے کے لئے قومی ایجنڈے کی ضرورت ہے، حکومت اور اپوزیشن بہت فاصلے پر ہوں گے تو معاملات کیسے آگے بڑھیں گے، اگر ہم چیف الیکشن کمشنر، ممبران، نیب اور آرمی ایکٹ پر قانون سازی نہیں کرسکتے تو یہ نظام کیسے چلے گا؟

حکومت اور اپوزیشن کو آپس کے فاصلے کم کرنا ہوں گے، اپوزیشن بتائے نیب قانون میں کونسی تبدیلی سے آپ متفق ہیں اور کونسی تبدیلی سے آپ متفق نہیں ہیں؟ احتساب، الیکشن کمیشن اور عدلیہ کے امور پر میں اتفاق رائے چاہے۔