پاکستان اور بھارت کے مابین قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ

پاکستان اور بھارت کے مابین قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ


24 نیوز: پاکستان اور بھارت کے مابین قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ، دفتر خارجہ کے مطابق پاکستانی جیلوں میں 471 بھارتی قیدی موجود ہیں۔ جن میں  418ماہی گیر جبکہ 53سول قیدی موجود ہیں۔ ذرائع کے مطابق بھارتی حکام کے مطابق 357 بھارتی قیدی پاکستانی جیلوں میں موجود ہیں, جن میں سے 249 سویلین قیدی ہیں۔

 24 نیوز کے مطابق رواں برس دوسری مرتبہ پاکستان اور بھارت نے  قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ کر لیا۔ دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان نے پاکستانی جیلوں میں قید بھارتی قیدیوں کی فہرست بھارتی ہائی کمشن کے حوالے کر دیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں: بنوں کے فرعون کا مقابلہ کرنے کیلئے یہاں سے الیکشن لڑنے کا فیصلہ کیا ہے: عمران خان

دفتر خارجہ کے مطابق پاکستانی جیلوں میں 471 بھارتی قیدی موجود ہیں۔ جن میں  418ماہی گیر جبکہ 53 سول قیدی  موجود ہیں۔ 21 مئی 2008 کے قونصلر رسائی کے ہامی معاہدے کے تحت دونوں ممالک سال میں دو مرتبہ اپنے اپنے ممالک میں قید ایک دوسرے کے قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ کرتے ہیں۔

پڑھنا مت بھولئے:  بلاول بھٹو زرداری نے اپنی پہلی انتخابی مہم کا آغاز کردیا

 ذرائع کے مطابق بھارتی وزارت خارجہ حکام نے بھی بھارت میں مقید پاکستانی قیدیوں کی فہرستیں نئی دلی میں پاکستانی ہائی کمیشن کے حوالے کر دیں ہیں۔ جن کے مطابق 357 پاکستانی مختلف جرائم میں بھارتی جیلوں میں مقید ہیں ان میں 249 پاکستانی سویلین قیدی جبکہ 108 پاکستانی ماہی گیر ہیں۔

یہ خبر بھی لازمی پڑھیں: مجلس علماء اسلام کا الیکشن میں چوہدری نثار کی مکمل حمایت کا اعلان

ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں ممالک کے مابین قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ دونوں ممالک کے درمیان سال میں دو بار کیا جاتا ہے۔ دونوں ممالک سال میں دو مرتبہ 31 جنوری اور 31 جولائی کو فہرستوں کے تبادلہ کے عمل کا آغاز کرتے ہیں جس کو چند روز میں مکمل کر لیا جاتا ہے۔