خیبر پختونخواہ میں بےاولاد جوڑوں کیلئے خوشخبری

خیبر پختونخواہ میں بےاولاد جوڑوں کیلئے خوشخبری


پشاور(24نیوز) خیبرپختونخوا میں بے اولاد جوڑوں کے لیے خوش خبری، پشاور کے رحمن میڈیکل انسٹی ٹیوٹ نے ٹیسٹ ٹیوب بچے پیدا کرنے کاآغاز کردیا، اب تک 6 جوڑوں کو اولاد کی خوشی مل گئی ہے۔
 لاہور اور اسلام آباد کے بعد خیبرپختونخوا میں بے اولاد جوڑے اب اولاد کی نعمت سے محروم نہیں رہیں گے، پشاور کی آر ایم آیی اسپتال میں سنٹر آف ری پروڈکٹیومیڈیسن سنٹر کی سربراہ ڈاکٹر فاطمہ کے مطابق 2014 میں اس سنٹر پر کام شروع ہوا اور پہلی کامیابی 2016میں ملی اب تک سنٹر میں 6 ٹیسٹ ٹیوب بے بی پیدا ہوچکے ہیں اور مزید 5 کیسز پر کام جاری ہے۔
اس شعبے سے وابستہ ماہر ڈاکٹر پروفیسر ڈاکٹر سعیدہ کا کہنا ہے کہ پشاور میں اس قسم کا کوئی سنٹر نہیں تھا۔ زیادہ تر اس قسم کے مریضوں کو اسلام آباد یا لاہور بھجوایا جاتا تھا، انکے مطابق سنٹر کے حوالے تمام اسلامی اور شرعی تقاضوں کو پورا کیا جاچکاہے۔

جنیاتی تکنیک سے ایک ٹیسٹ ٹیوب بے بی پر 35 ہزار سے لے کر 3 لاکھ تک کا خرچہ آتا ہے جبکہ اس سنٹر کی کامیابی کا تناسب عالمی معیار کے مطابق 35 سے 40 فیصد ہے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔