سیالکوٹ میں 13 سالہ بچی کو پنچایت کے فیصلہ کی بھینٹ چڑھا دیا گیا

سیالکوٹ میں 13 سالہ بچی کو پنچایت کے فیصلہ کی بھینٹ چڑھا دیا گیا


سیالکوٹ (24 نیوز) شاعر مشرق کے شہر میں اندھیر مچ گیا۔ پنچوں نے من مرضی کا فیصلہ صادر کیا۔ 13 سالہ بچی کو پنچایت کے فیصلہ کی بھینٹ چڑھا دیا گیا۔

24 نیوز کے مطابق سیالکوٹ میں پنچایت نے ایسا فیصلہ کیا کہ انسانیت دنگ رہ گئی۔ چودھری کی بیٹی سے پسند کی شادی کے جرم میں 13سالہ بہن کو 65سالہ شخص سے بیاہ دیا گیا۔ جبکہ پولیس کا کہنا ہے کہ مہیا کیے گئے سرٹیفکیٹ کے مطابق نبیلہ بالغ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: لودھراں سے نوجوان لڑکی کی جلی ہوئی لاش برآمد 

دوسری جانب ڈیرہ غازی خان میں ظلم کی انتہا ہو گئی۔ کوٹ چھٹہ میں باپ اور سوتیلی ماں نے بیٹی کو پاگل قرار دے کر زنجیروں میں جکڑ دیا جس کے باعث اس کے پاؤں بھی زخمی ہو گئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ کوٹ چھٹہ کی رہائشی صائمہ بی بی کی شادی مانہ احمدانی میں ہوئی تھی۔ شوہر کے تشدد کرنے پر طلاق کا مطالبہ کیا تھا جبکہ صائمہ بی بی کی تین بیٹیاں بھی ہیں۔