ریلوے انتظامیہ ٹریک بحال نہ کرسکی،8 بوگیا ں ٹریک سے اتر گئیں

ریلوے انتظامیہ ٹریک بحال نہ کرسکی،8 بوگیا ں ٹریک سے اتر گئیں


 رحیم یار خان(24نیوز) مال گاڑی کی آٹھ بوگیا ں ٹریک سے اتر گئیں۔  حادثہ ہوئے دوسرا روز ہے۔ لیکن ریلوے انتظامیہ ٹریک بحال نہ کر سکی۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق کے پاکستان ریلوے کو ترقی کے سفر پر گامزن کرنے کے دعووں کی قلعی کھل گئی۔

رحیم یار خان کے قریب مال گاڑی کی 8 بوگیاں ٹریک سے اترنے کے حادثے کو اڑتالیس گھنٹے گزر گئے۔ ٹریک پر ریلوے ٹریفک مکمل طور پر بحال نہ ہوسکی۔

اندرون سندھ سے ملک کےمختلف شہروں کو جانے والی دجنوں ٹرینیں کئی کئی گھنٹے تاخیر کا شکار ہیں۔ ٹرینوں بیٹھے مسافر بے بسی کی تصویر بنے ہیں۔ کب ٹرین منزل پر پہنچے اور کب وہ اپنے گھر پہنچیں۔

رحیم یار خان سے گزرنے والی تمام ٹرینوں کو ایک ہی ٹریک سے گزارا جارہا ہے۔ کراسنگ پڑنے پر ایک ٹرین کے گزرنے تک دوسری ٹرین کو خاصی دیر انتظار کرنا پڑتا ہے۔

ڈویژنل انجینئر سکھر ڈویژن خادم حسین کے مطابق ٹریک پر کام ہورہا ہے۔ اپ ٹریک آج مکمل ہوجائے گا۔

لاہور سمیت کراچی اور ملتان کیلئے چلنے والی عوامی ایکسپریس،شالیمار اور ہزارہ ایکسپریس ٹرینوں کو منزل تک پہنچنے میں 36گھنٹے تاخیر ہورہی ہے۔

مسافرریلوے انتظامیہ کی کارکردگی کی دوہائیاں دینے لگے، کہتے ہیں مسافروں کو سہولت تو ملتی نہیں کوفت اور اذیت کا سامنا ہی رہتا ہے۔