کسان مالی بدحالی کا شکار، حکومتِ وقت خاموش تماشائی


وزیرآباد(24نیوز) دور جدید میں بھی مزدور اورکسان مالی بدحالی کا شکار،وزیرآباد کے علاقہ بیلا میں کسان آج بھی آلو کی فصل مٹی اور بھوسے میں محفوظ کرتے ہیں۔دوسری طرف مزدور 300روپےدیہاڑی پرکام کرنے پرمجبورہیں۔

تفصیلات کے مطابق دریائے چناب کے کنارے واقعہ وزیرآباد کا مشہورعلاقہ بیلا جومشہورتو ہے اشتہاریوں اور بد معاشوں کی پناہ گاہوں کے حوالے سےمگر یہاں آلو بھی بڑی مقدار میں کاشت کیا جاتاہے۔ وسائل کی کمی کے باعث کسان آلو کی فصل بڑے بڑے سٹوروں میں نہیں رکھتے بلکہ کھیتوں میں ہی بھوسے اورمٹی میں چھپا دیتے ہیں اور وقت کے ساتھ ساتھ فروخت کرتے رہتے ہیں جبکہ مزدور خواتین،بچے اورمرد صرف 300روپے یومیہ پرکام کرتے ہیں۔

دوسری جانب کاشتکاروں کا کہنا تھا کہ دیگر مصنوعات کی طرح آلو کی فصل کو ایکسپورٹ کرنے کی اجازت دی جائے۔ جب فصل کا ریٹ اچھا ملے گا تو یقیناً مزدوری میں بھی اضافہ ممکن ہوگا۔ حکومت کوچاہیئے کہ وہ آلو کی فصل کا ریٹ بڑھائے تاکہ کسانوں کی مالی حالت بہترہو اورمزدوروں کا چولہا بھی چلتارہے۔