پانی کی کمی،سندھ میں کپاس کی کاشت میں تاخیرکاامکان


اسلام آباد(24نیوز) عالمی کاٹن مارکیٹ میں تیزی نے پاکستان میں بھی روئی اور پھٹی مہنگی کر دی، 4 روز کے دوران فی من قیمت 500روپے تک بڑھ گئی، پانی کی کمی کے باعث سندھ میں کپاس کی کاشت میں تاخیر کا امکان ہے۔     

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں روئی کی قیمت ایک ہفتے کے دوران 500 روپے فی من اضافے سے 7500 روپے فی من تک پہنچ گئی۔ اس دوران عالمی مارکیٹ میں روئی کی قیمت میں 7 فیصد تک اضافہ رکارڈ کیا گیا۔ پاکستان میں روئی کا سیزن ختم ہونے کے قریب ڈیمانڈ بڑھنے سے بھی مارکیٹ میں تیزی دیکھی جا رہی ہے۔

 کاٹن جنرز فورم کے چیئرمین احسان الحق کے مطابق پانی کی شدید کمی کے باعث سندھ میں کپاس کی کاشت میں تاخیر ہو رہی ہے. سندھ کے ساحلی شہروں بدین, گھارو، میر پور، سجاول اور ٹھٹھہ وغیرہ میں روایتی طور پر فروری کے آخری ہفتے میں کپاس کی کاشت شروع ہو جاتی تھی جو ابھی تک پانی کی کمی کے باعث شروع نہیں ہو سکی۔