پنجاب کی وزارت اعلیٰ کے پانچ لیگی امیدوار میدان میں آ گئے


لاہور (24 نیوز) وزیر اعلیٰ پنجاب اور پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر میاں محمد شہبازشریف تو وفاق میں اپنے بڑے بھائی کی جگہ لینے کی لیے تیار بیٹھے ہیں۔ مگر پنجاب میں ان کی جگہ کون لے گا؟ اس کے لئے پانچ امیدوار میدان میں آگئے ہیں۔

24 نیوز کے مطابق نواز شریف کی نااہلی کے بعد شہباز شریف کے ہاتھ نہ صرف پارٹی صدارت لگی بلکہ وہ اپنی جماعت کی جانب سے وزارت عظمیٰ کے امیدوار بھی قرار پائے۔ جس کے بعد ن لیگ سے وابستہ سینئر قیادت کو پہلی مرتبہ موقع ملا کہ وہ بھی وزارت اعلیٰ کی دوڑ میں شامل ہو سکے۔

وزارت اعلیٰ کے لیے رانا ثنا اللہ، سعد رفیق میدان میں اترے ہیں تو شہباز شریف کے صاحبزادے حمزہ شہباز وزارت اعلیٰ شریف فیملی میں رکھنے کی خواہش لیے میدان میں موجود ہیں۔

پڑھنا نہ بھولیں:  شریف خاندان کو احتساب عدالت نے بڑی خوشخبری سنا دی 

ایک مدت سے وزیر اعلیٰ ہاوس میں قیام کی خواہش رکھنے والے چودھری نثار بھی ابھی مایوس نہیں ہوئے۔ شہباز شریف وزارت عظمیٰ کے حصول میں ناکامی کی صورت میں ایک بار پھر وزارت اعلیٰ اپنے پاس رکھیں گے۔

 

لیگی ذرائع کے مطابق شہباز شریف، سعد رفیق، حمزہ شہباز، رانا ثنا اللہ اور چودھری نثار قومی اور صوبائی حلقوں سے انتخاب لڑیں گے۔ سعد رفیق نے شہباز شریف سے مشاورت کے بعد پنجاب اسمبلی کی نشست سے الیکشن لڑنے کا فیصلہ کیا۔ رانا ثناءاللہ سینیئر وزیر ہونے کی وجہ سے وزارت اعلی کے امیدوار سمجھے جاتے ہیں۔

حمزہ شہباز خود کو شہباز شریف جانشین ثابت کرنا چاہتے ہیں۔ چوہدری نثار ایک عرصہ سے پنجاب کی وزارت اعلیٰ کے امیدوار ہیں۔ 2013 میں بھی چوہدری نثار اسی نیت سے صوبائی اسمبلی کا انتخاب لڑے تھے۔