سابق صدر کے عدالت نہ پیش ہونے کی بڑی وجہ سامنے آگئی

سابق صدر کے عدالت نہ پیش ہونے کی بڑی وجہ سامنے آگئی


اسلام آباد( 24نیوز ) سابق صدر پرویز مشرف کل خصوصی عدالت میں پیش نہیں ہورہے، پرویز مشرف سے متعلق ان کے معالجین کی رپورٹ کل خصوصی عدالت میں پیش کی جائیگی۔

تفصیلات کے مطابق سنگین غداری کیس میں ملوثسابق صدر پرویز مشرفکل خصوصی عدالت میں پیش نہیں ہورہے، پرویز مشرف کے قریب ذرائع کا دعویٰ ہےکہ پرویزمشرف 'امییلوڈاسس لائٹ چین' نامی بیماری میں مبتلا ہیں، پرویز مشرف کی چھے ماہ بعد بیماری کی تشیخص ہوئی ہے، بیماری کی شدت کے باعث مشرف پرویز کی یادداشت پر بھی گہرا اثر پڑا ہے وہ مسلسل ایک منٹ تک بات بھی نہیں کر پا رہے،  معالجین ان کی رپورٹ کل خصوصی عدالت میں پیش کی کریں گے۔

ذرائع کاکہناتھاکہ مسلسل ایک منٹ تک بات کرنے پر پرویز مشرف کو سانس پھول جاتی ہے،اس وقت وہدوبئی میں امریکن ہسپتال میں زیر علاج ہیں،ڈاکٹروں نے پرویز مشرف کو سفر کرنے سے منع کیا ہے،سابق صدر پرویز مشرف کرسی پر بھی آرام سے نہیں بیٹھ سکتے، پرویز مشرف سنگین غداری کیس کی سماعت کل خصوصی عدالت میں ہوگی۔

 گزشتہ سماعت پرسپریم کورٹ نے پرویزمشرف کے ٹرائل سے متعلق فیصلہ سناتے ہوئے کہا تھا کہ 2 مئی کومشرف نہیں آتے تو دفاع کے حق سے محروم ہوجائیں گے، اور یہ بھی حکم دیا تھا کہ ٹرائل کورٹ ان کی غیرموجودگی میں ٹرائل مکمل کرکے حتمی فیصلہ جاری کردے۔

واضح رہے کہ سابق حکمران جماعت پاکستان مسلم لیگ نواز نے سنہ2013 کے انتخابات جیتنے کے بعد سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے خلاف آئین کے آرٹیکل 6 کے تحت سنگین غداری کا مقدمہ درج کروایا تھا، مقدمے کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت کے چار سربراہان تبدیل ہوچکے ہیں لیکن یہ مقدمہ اپنے منطقی انجام کو نہیں پہنچا۔