منشا بم ،چار بیٹوں کا نام ای سی ایل میں شامل،ارکان اسمبلی کیخلاف کارروائی کا حکم

منشا بم ،چار بیٹوں کا نام ای سی ایل میں شامل،ارکان اسمبلی کیخلاف کارروائی کا حکم


اسلام آباد( 24نیوز )لاہور ماڈل ٹاون میں غیرقانونی قبضوں کا معاملہ،عدالت نے منشا بم اور ان کے چاروں بیٹوں کا نام بھی ای سی ایل میں ڈالنے اور منشا بم کو جلد گرفتار کرنے کا حکم دے دیا،عدالت نے منشا بم گروپ سے تمام اراضی واگزار کرانے اور تحریک انصاف سے رکن قومی اسمبلی کرامت کھوکھر اور رکن پنجاب اسمبلی ندیم عباس کے خلاف بھی کارروائی کا حکم دے دیا۔

سپریم کورٹ میں لاہور میں قبضہ مافیا منشا بم سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔عدالت میں رکن قومی اسمبلی کرامت کھوکھر اور ایم پی اے ندیم عباس عدالت میں پیش ہوئے،سی سی پی او لاہور شہزاد نے عدالت کو بتایا کہ ہم نے منشا بم کی کال ٹریس کی مگر وہ نہیں مل سکے،امید ہے جلد انھیں گرفتار کریں گے۔

چیف جسٹس نے کرامت کھوکھر سے پوچھا کہ آپ بتائیں کیا رشتہ ہے آپکا منشا کھوکھر سے جس پر کرامت کھوکھر نے کہاکہ وہ ہماری برادری کے ہیں،کرامت کھوکھر نے عدالت سے معافی مانگتے ہوئے کہاکہ میں نے بہت بڑی غلطی کی ہے آئندہ ایسا نہیں کروں گا۔

چیف جسٹس نےریمارکس دیے کہ یتیموں,مسکینوں اور تارکین وطن کی جائیدادوں پر قیضے کر لیے گئے ہیں،،ایک عورت کو 60 سال بعد سپریم کورٹ نے قبضہ واگزار کرا کے دیا،عدالتی ایکشن پر اب وزیر اعلی پنجاب بھی اس حوالے سے متحرک ہو گئے ہیں چیف جسٹس نے کہاکہ جو پولیس افسران قبضے واگزار کرائیں ان کے تبادلے لر دیے جاتے ہیں،،اگر ہمیں کسی پولیس افسر کے تبادلے میں بدنیتی نظر آئی تو خود نمٹ لیں گے انھوں نے مزید کہا کہ اگر نظر آیا کہ وزیر اعلی پنجاب کسی گروپ کی پشت پناہی کر رہے ہیں تو ان سے پوچھیں گے۔

پولیس نے عدالت کو بتایا کہ پی ٹی آئی سے پہلے ن لیگ حکومت بھی منشا بم کو حمایت حاصل تھی،جس پر عدالت نے تحریک انصاف کے تادیبی کمیٹی کرامت کھوکھر اور ندیم عباس کیخلاف ضابطے کی کاروائی حکم دیتے ہوئے کہ دونوں اراکین کو چاہیے کہ کیمپ لگا کر خود قبضے واگزار کرائیں،دونوں اراکین منشا کی گرفتاری کیلئے بھی پولیس سے تعاون کریں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ بیرون ملک پاکستانی ملک کیساتھ مخلص ہیں،بیرون ملک پاکستانیوں کی جائیداد پر قبضہ کیا جارہا ہے،چیف جسٹس نے مزید کہاکہ پی ٹی آئی ہمارے پیچھے پیچھے چلتی ہے،جو کام ہم کرتے ہیں وہی حکومت کرنے لگ جاتی ہے،ہم نے قبضہ مافیا کیخلاف کارروائی شروع کی تو آج وزیر اعلیٰ نے بھی بیان دیدیا،چیف جسٹس نے کہاکہ میں تو سوچ رہا تھا وزیر اعظم کو بھی اس معاملے میں شامل کروں۔

عدالت نے ایڈووکیٹ احسن بھون کو عدالتی معاون مقرر کرتے ہوئے کرامت کھوکھر اور ندیم عباس بارا کو تحریری جواب لکھ کر دینے کا حکم دے دیا،کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کردی گئی۔