زیادتی کیس میں غفلت ، آئی جی کے پی کےنے انصاف کی مثال قائم کردی

زیادتی کیس میں غفلت ، آئی جی کے پی کےنے انصاف کی مثال قائم کردی


ایبٹ آباد(24 نیوز)مغوی لڑکی سے اجتماعی زیادتی کیس میں پولیس کی غفلت پر آئی جی کے پی کے پولیس نے تھانہ حویلیاں اور میر پور کے ایس ایچ او سمیت 9 افسران کو معطل کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق 23 سالہ لڑکی کو تھانہ حویلیاں کی حدود سے اغوا کر کے تھانہ میر پور کی حدود میں 7 افراد نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا،جس کے بعد لڑکی کو چھوڑ دیا گیا، لڑکی نے تھانہ میر پور میں ایف آئی آر درج کرانے کیلئے درخواست دی مگر وہاں پر اس کی سنوائی نہ ہوئی، پولیس نے مقدمہ درج کرنے کے بجائے ٹرک ڈرائیور کے حوالے کر دیا اور کہا کہ خاتون کو حویلیاں اتار دینا۔

ٹرک ڈرائیور نے بھی مجبور لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالااس کے بعد تھانہ حویلیاں میں بھی لڑکی نے متعدد بار درخواستیں دیں مگر ایف آئی آر درج نہ کی گئی۔ مایوس ہو کر لڑکی نے آئی جی پولیس سے رابطہ کیا ، جنہوں نے نوٹس لیتے ہوئے دونوں تھانوں کے ایس ایچ او سیمت 9 افسران کو معطل کر کے انکوئری رپورٹ طلب کر لی ہے۔

واضح رہے لڑکی کا تعلق ساہیوال سے تھا اور وہ اپنے خاندان سمیت حویلیاں میں کرائے کے مکان میں رہائش پذیر تھی۔