پاکستان سٹاک ایکسچینج میں شدید مندی، سرمایہ کار پریشان

پاکستان سٹاک ایکسچینج میں شدید مندی، سرمایہ کار پریشان


اسلام آباد(24نیوز) نئی حکومت کی اقتصادی پالیسی واضح نہ ہونے کے باعث پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں رواں ہفتے کے دوران بھی مندی رہی،  انڈیکس دو فیصد گر گیا، غیر ملکی سرمایہ کاروں کی طرف سے شیئرزکی فروخت کا سلسلہ بھی جاری رہا۔

اسٹاک مارکیٹ میں ہفتے کے دوران چار روز مندی کا شکار رہی،  اقتصادی ماہرین کے مطابق سرمایہ کار حکومت کی طرف سے کوئی واضح اقتصادی پالیسی کے اعلان کا انتظار کر رہے ہیں، اس کے بعد ہی مارکیٹ کی سمت کا تعین ہو گا،  ہفتے کے اختتام پر ہنڈرد انڈیکس مجموعی طور پر 923 پوائنٹ کی کمی سے 41 ہزار 742 پر بند ہوا،  اوسطا روزانہ 17 کروڑ 75 لاکھ شئیرز کا کاروبار ہوا،  جبکہ مارکیٹ میں شیئرز کی مجموعی مالیت 98 ارب 52 کروڑ روپے کم ہو گئی۔

ہفتے کے دوران اسٹاک مارکیٹ میں بیرونی سرمایہ کاری کے حجم میں ایک کروڑ ڈالر کی کمی دیکھی گئی  جو پچھلے ہفتے سے 53 فیصد زیادہ ہے۔ مارکیٹ میں بے یقینی کے باعث اگست کے دوران مجموعی طور پر غیر ملکی سرمایہ کاروں کی طرف سے 6 کروڑ 74 لاکھ ڈالر کے شئیرزفروخت کیے جاچکے ہیں۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔