بلوچستان عوامی پارٹی اور پی ٹی آئی کی جانب میں حکومت سازی کیلئے تعاون کی درخواست

08:42 PM, 2 Aug, 2018

شازیہ بشیر

   24نیوز : بلوچستان عوامی پارٹی اور پی ٹی آئی کی جانب میں حکومت سازی کیلئے تعاون کی درخواست ، سردار اختر مینگل نے حمایت کیلئے 6 مطالبات پیش کردیے۔

تفصیلات کے بلوچستان میں آئندہ حکومت سازی کیلئے معاملے پر بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل کے سربراہ سردار اختر مینگل سے تحریک انصاف اور بلوچستان عوامی پارٹی کے وفود نے الگ الگ ملاقاتیں کیں۔ بلوچستان ہاﺅس اسلام آباد میں نعیم الحق اور یار محمد رند پر مشتمل پی ٹی آئی کے وفد نے بی این پی مینگل کے سربراہ سردار اختر مینگل سے ملاقات کی اور ان سے مرکز میں حمایت مانگ لی۔ سردار اختر مینگل کی جانب سے پی ٹی آئی وفد کو 6 نکاتی مطالبات تھمادیے گئے۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومتی اتحاد میں شمولیت کی دعوت پر پی ٹی آئی کا مشکور ہوں ۔

یہ بھی پڑھیں:مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کو اقلیت میں بدلنے کی سازش  

جب تک بنیادی مسائل حل نہیں ہوتے بلوچستان ترقی نہیں کرسکتا، بلوچستان کے مسائل سامنے رکھے ہیں۔اس موقع پر نعیم الحق کا کہنا تھا کہ سردار اختر مینگل کے مطالبات جائز ہیں تحریک انصاف بلوچستان کی محرومیوں کا ازالہ کرے گی۔ خواہش ہے کہ سردار اختر مینگل عمران خان سے بنی گالہ میں ملاقات کریں اور اپنے مطالبات براہ راست ان کے سامنے رکھیں۔ بلوچستان عوامی پارٹی کے صدر جام کمال نے بھی وفد کے ہمراہ سردار اختر مینگل سے بلوچستان ہاوس میں ملاقات کی۔

پڑھنا نہ بھولیں:عامر خان نے عمران خان سے معذرت کرلی 

ملاقات کے بعد میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے سردار اختر مینگل نے کہا چھے مطالبات کی منظوری کی صورت میں بلوچستان عوامی پارٹی کے ساتھ تعاون کیلئے لچک دکھا سکتے ہیں۔ سردار اختر مینگل کا مطالبہ ہےکہ بلوچستان میں تمام خفیہ آپریشن ختم کیے جائیں۔ بلوچ سیاسی جماعتوں میں مداخلت بند کر کے انہیں کام کرنے کا موقع دیا جاَے۔ بلوچ کارکنوں اور رہنماﺅں پر تشدد اور ان کی گرفتاریاں بند اور لاپتا افراد کو بازیاب کرایا جائے۔

مزیدخبریں