حکومت کو تمباکو سیکٹر کو ریلیف دینا مہنگا پڑ گیا


اسلام آباد(24نیوز) حکومت کو تمباکو سیکٹر کو ریلیف دینا مہنگا پڑ گیا،اسٹیٹ بینک نے سگریٹ کی پیداوار میں اضافے پر الرٹ جا ری کردیا،ٹیکسز میں کمی سے سگریٹ کی پیدوار میں 3 سال کے بعد ریکارڈ اضافہ ہوا۔

تفصیلات کے مطابق سگریٹ سستے ہوتے ہی ملک بھر میں تمباکو نوشی میں ہوشربا اضافہ ہونے لگا۔ اسٹیٹ بینک نے تمباکو نوشی کے بڑھتے ہوئے رجحان کی نشاندہی کر دی۔ دستاویز کے مطابق سگریٹ سستے ہونے سے 3 سال بعد پہلی مرتبہ ان کی پیداوار میں رکارڈ اضافہ ہوا۔مالی سال کے پہلے 4 ہفتے میں سگریٹ کی پیداوار میں 92 فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا۔

واضح رہے کہ 2016،2017 میں سگریٹ کی پیداوار میں 42 فیصد کمی ریکارڈ ہوئی تھی۔  وفاقی حکومت نے بجٹ میں سگریٹ پر ٹیکسز کم کئے۔سگریٹ کیلئے تیسرا سلیب متعارف کرایا گیا۔ تیسرے سلیب کے تحت سگریٹ کی ایک ڈبی پر 16 روپے ٹیکس عائد کیا گیا۔ جس سے ملٹی نیشنل برانڈز کے سگریٹ کی قیمتوں میں واضح کمی رکارڈ کی گئی۔