ڈیرہ مراد جمالی: واٹر کورسز میں زرعی اور پینے کے پانی کی قلت

ڈیرہ مراد جمالی: واٹر کورسز میں زرعی اور پینے کے پانی کی قلت


اسلام آباد(24نیوز) ڈیرہ مراد جمالی میں پٹ فیڈر کینال سمیت آبی گزرگاہوں میں زرعی اور پینے کے پانی کی شدید قلت کا سامنا ہے، ٹیل کے زمینداروں اور کاشتکاروں نے پانی کی قلت کے خلاف پٹ فیڈر پل پر دھرنا دے دیا، مظاہرین نے کمشنر نصیرآباد سے ملاقات میں پانی کی جلد فراہمی کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق  وڈیرہ عرض محمد عمرانی اور دیگر نے مظاہرے سے خطاب اور صحافیوں سے بات چیت کرتے ھوے کہا کہ پٹ فیڈر کینال اور اسکی زیلی شاخوں میں مصنوعی طور پر پانی کی ترسیل بند کر رکھی ہے۔ زمینداروں اور کاشتکاروں سمیت مقامی آبادی کو زرعی اور پینے کے پانی کی قلت سے سخت مشکلات کا سامنا ہے۔محکمہ آبپاشی کی عدم توجہ کے باعث ربیع کی فصل پانی کی عدم فراہمی کے سبب سوکھنے لگی ہیں۔

واضح رہے کہ اگر فوری طور پر پانی کی ترسیل شروع نہ کی گئی تو ہزاروں ایکڑ پر کھڑی فصلیں تباہ ہونے کا خدشہ ہے۔ کاشتکاروں نے وزیر اعلی بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو، چیف سکریٹری، صوبائی وزیر آبپاشی، کمنشر نصیر آباد ڈاکٹر سعید جمالی اور دیگر حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ پٹ فیڈر کینال کی ذیلی شاخوں عمرانی اور روپا شاخ سمیت دیگر زیلی واٹر کورسز میں زرعی اور پینے کے پانی کی فراہمی کو ممکن بنایا جائے۔