افغانستان غلط معلومات کی بنیاد پر الزام لگا رہا ہے: پاکستان


اسلام آباد (24 نیوز) قومی سلامتی کمیٹی نے کابل میں حالیہ دہشتگردی کے واقعات کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ افغان حکومت کا ان واقعات پر ردعمل غلط فہمی اور غلط معلومات کی بنیاد پر ہے۔

وزیراعظم کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں خطے کی سیکیورٹی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس کے بعد جاری اعلامیہ میں کہا گیا کہ پاکستان کابل میں دہشتگردی کے حالیہ واقعات کی شدید مذمت کرتا ہے اور افغان بھائیوں کے غم میں برابر کا شریک ہے۔

کمیٹی کے شرکاء کا کہنا تھا کہ مشکلات کے باوجود امن و استحکام کیلئے افغان حکومت کے ساتھ مثبت تعاون جاری رکھیں گے۔ پاکستانی وفد شیڈول کے مطابق ہفتے کو کابل کا دورہ کرے گا۔ پاکستانی وفد دونوں ممالک کے درمیان اظہار یکجہتی کا لائحہ عمل پیش کرے گا۔

قومی سلامتی کمیٹی نے فنانشل ٹاسک فورس فریم ورک کا بھی جائزہ لیا۔ اس فورس سے حاصل کی گئی کامیابیوں کے بارے میں عالمی برادری کو آگاہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس کے شرکاء نے پاک افغان بارڈر کنٹرول نظام پر کام کی رفتار پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ افغان حکومت پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے میں تعاون کرے۔

اجلاس میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل زبیر حیات، تینوں مسلح افواج کے سربراہان، وزیر خارجہ، وزیر داخلہ اور قومی سلامتی کے مشیر سمیت ڈی جی آئی ایس آئی اور ڈی جی ایم آئی نے شرکت کی۔