زیادتی کاشکار ہونیوالی ایل ایل بی کی طلبہ کوجان سے مارنے کی دھمکیاں



راولپنڈی(24نیوز) ایل ایل بی کی طلبہ کو زیادتی کانشانہ بنانے والا ایک وکیل تھا جس نے اپنی ہوس بجھانے کے لئے طلبہ کو مبینہ زیادتی کانشانہ بنایا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب کے شہر راولپنڈی کی ایل ایل بی کی طلبہ سدرہ سے مبینہ زیادتی کرنے والے وکیل کے خلاف مقدمہ درج کرنے پر طلبہ کی زندگی کو خطرہ لاحق ہوگیا،متاثرہ طلبہ کاکہناتھاکہ وکیل ملزم جس کا نام اسد ہاشمی ہے اس نے زیادتی کی،قانونی کارروائی کرنے پر ملزم کا ماموں جاوید ہاشمی مسلسل دھمکیاں دے رہا ہے،ملزم کے ماموں اسلامک یونیورسٹی میں پروفیسر ہیں،وہ مجھے کہہ رہے ہیں کہ اسد اور ایف آر کو چھوڑ دوں۔

طلبہ کاکہناتھاکہ میری جان کو خطرہ ہے مجھے کسی بھی وقت یہ لوگ مار سکتے ہیں، ان لوگوں نے مجھے کہاکہ ہمارے ساتھ تعلقات قائم کرو،تمہارے تمام اخراجات ہم اُٹھائیں گے، مجھے طرح طرح سے ہراساں کیاجارہاہے، متاثرہ طلبہ نے چیف جسٹس سے گزارش ہے کہ میری جان کوخطرہ ہے مجھے بچا لیں۔

ضرور پڑھیں:انکشاف 16 جون 2019

واضح رہےیہ واقعہ26 جنوری تھانہ شمس کالونی میں پیش آیا، وفاقی پولیس کی جانب سے مقدمہ تو درج کرلیا گیا مگر ملزم تاحال گرفتار نہیں ہوسکا، پولیس کی جانب سے سستی کامظاہرہ کیا جارہا ہے،زیادتی کا شکار ہونے والی طلبہ کو کیس کے سلسلے میں ملزم وکیل اسد ہاشمی نے اپنے دفتر  بلایا تھا، جہاں طلبہ کے ساتھ زیادتی کی گئی۔

M.SAJID KHAN

CONTENT WRITER