محکمہ فائر بریگیڈ امداد کا منتظر، ملازمین جان خطرے میں ڈالنے پر مجبور

محکمہ فائر بریگیڈ امداد کا منتظر، ملازمین جان خطرے میں ڈالنے پر مجبور


کراچی(24نیوز) محکمہ فائر بریگیڈ خود امدادی کارروائی کا منتظر، محکمے میں وسائل اور مشینری کی کمی مسئلہ بن گئی، ملازمین آگ لگنے کی صورت میں جان پر کھیل کر امدادی سرگرمیاں کرنے پر مجبور ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں  1997میں محکمہ کو شہید محترمہ بے نظیر بھٹو کی جانب سے 50 گاڑیاں دی گئیں تھیں۔جن میں سے اب صرف 20 ہی کارآمد ہیں باقی کباڑ کا ڈھیر بن چکی ہیں۔

  محکمہ فائر بریگیڈ کےمطابق ان کے پاس 4 میں سے صرف 1 اسنارکل قابلِ استعمال ہے جبکہ 4 واٹر باوزرز میں سے ایک خراب ہوچکا ہے ۔ فائر آفیسرز کو 8 ماہ سے اوور ٹائم تک نہیں دیا گیا۔ 2014 سے اب تک ملازمین کو یونیفارمز بھی نہیں دیئے جاسکے۔ اس اثنا میں فائر فائٹرز  جان کی بازی لگاکر آگ بجھانے کی سرگرمیوں میں تو مصروف ہوتے ہیں مگر انہیں خود امدادی کارروائی کی ضرورت ہے۔