جارحانہ بلے بازی،بہترین گیند بازی کا دوسرا نام شاہد آفریدی

جارحانہ بلے بازی،بہترین گیند بازی کا دوسرا نام شاہد آفریدی


ویب ڈیسک: شاہد آفریدی ،جارحانہ بلے بازی،بہترین گیند بازی کا دوسرا نام ہے،انہوں نے 1996 میں کھیل کا آغاز کیا اور پھر دنیائے کرکٹ کے افق کا وہ ستارہ بن گئے جو اب ہمیشہ چمکتا رہے گا۔

آفریدی ایک ایسے بیٹسمین کے طور پر جانے جاتے ہیں جو چاہے ٹیسٹ میچ ہو ون ڈے یا پھر ٹی ٹوئنٹی ان کا بیٹنگ کرنے کا انداز تبدیل نہیں ہوتا، یہی وجہ ہے کہ پاکستان سمیت شاید ہی دنیا کا کوئی ایسا کونہ ہو جہاں شاہد آفریدی کے مداح نہ ہوں۔گوکہ شاہد آفریدی کا ٹیسٹ کیریئر زیادہ طویل نہیں رہا لیکن پھر بھی انھوں نے اس فارمیٹ میں کئی بار اپنی جارحانہ بیٹنگ سے مداحوں کے دل جیتے ہیں۔

شاہد آفریدی نے اپنے ٹیسٹ کیریئر کا آغاز 1998 میں آسٹریلیا کے خلاف کراچی میں کیا تھا،انھوں نے اپنا آخری ٹیسٹ بھی آسٹریلیا ہی کے خلاف کھیلا تھا، ٹیسٹ کرکٹ میں شاہد آفریدی نے27 میچز میں36.51 کی اوسط سے 1716 رنز بنائے، بھارت کیخلاف128 گیندوں پر 156 رنز ان کی سب سے بڑی اننگز تھی۔
سابق کپتان نے اپنے کیریئر کا آغاز ہی37 گیندوں پر سنچری اسکور کرکے کیا جو اس وقت بین الاقوامی کرکٹ کی تیز ترین سنچری اننگز تھی،انھوں نے اپنے دوسرے ہی بین الاقوامی ون ڈے میچ میں سری لنکن بولنگ کے خلاف صرف 37 گیندوں پر سنچری اسکور کی جس میں11چھکے اور6 چوکے شامل تھے۔ 398 ایک روزہ میچز میں شاہد آفریدی نے 8064 رنز بنائے جس میں 6 سنچریاں اور 39 ففٹیزشامل ہیں۔
شاہد آفرید ی کو ساتھی اور غیر ملکی کھلاڑیوں نے زبردست خراج تحسین پیش کیا ہے،انہوں نے بوم بوم آفریدی کو لیجنڈ اور چمکتا ستارہ قرار دیا ہے۔