سینیٹ انتخابات: ن لیگ کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس، چودھری نثار جان بوجھ کے شریک نہ ہوئے


اسلام آباد (24 نیوز) سینیٹ انتخابات سے قبل مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے ظہرانہ دیا۔ چوہدری نثار پارلیمنٹ ہاؤس میں ہونے کے باوجود شریک نہ ہوئے۔ دو ناراض لیگی ارکان نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ انتخابات سے ایک روز قبل حکمران جماعت مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا جس میں 132 ارکان نے شرکت کی۔

یہ بھی پڑھئے: ایک شخص کے لیے قانون سازی عدالت کو آنکھیں دکھانے کے مترادف ہے، چیف جسٹس

چوہدری نثار پارلیمنٹ ہاؤس میں موجود ہونے کے باوجود شریک نہ ہوئے۔ چوہدری نثار نے ظہرانہ سے قبل وفاقی وزیر رانا تنویر سے ان کے چیمبر میں ملاقات کی۔ پھر وزیر اعظم سے بھی راہداری میں ملے۔ اسپیکر سے بھی ان کے چیمبر میں ملاقات کی لیکن ظہرانہ میں شریک ہوئے اور نہ پارلیمانی پارٹ کے اجلاس ہی میں شرکت کی۔

اجلاس کے دوران وزیر اعظم نے لیگی ارکان کو ہدایت کی کہ وہ نواز شریف کے نامزد امیدواروں کو بھاری اکثریت سے کامیاب بنائیں۔ وزیر اعظم نے بتایا کہ اتحادی جماعتیں بھی لیگی امیدواروں کو ووٹ دیں گی۔

پڑھنا نہ بھولئے: نواز شریف کا راستہ روکنے والے نہیں روک سکے، مشاہد اللہ خان 

ذرائع کے مطابق دو ارکان نے شکایت کی کہ انہیں نامعلوم نمبروں سے کالز موصول ہو رہی ہیں جس پر وزیر اعظم نے کہا کہ اب یہ سلسلہ بند ہونا چاہیے جس کو بھی کوئی کال آئے وہ انہیں آگاہ کرے۔ وہ اس معاملہ کو ہر فورم پر اٹھائیں گے۔