مسلم لیگ ن کے پارلیمانی پارٹی اجلاس کی اندرونی کہانی

مسلم لیگ ن کے پارلیمانی پارٹی اجلاس کی اندرونی کہانی


اسلام آباد(24 نیوز) پاکستان مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں خواجہ سعد رفیق اور میاں جاوید لطیف نے تحریک انصاف کو نیب کا اتحادی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ نواز شریف کی پارٹی کے فیصلے بھی نواز شریف ہی کریں گے، کسی اور کے فیصلوں کو تسلیم کرنے پابند نہیں ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کی اندرونی کہانی ٹونٹی فور نیوز نے حاصل کرلی جس کے مطابق لیگی رہنما حکومت، نیب اور پارٹی کی مرکزی قیادت سے نالاں نظر آئے۔ ذرائع کے مطابق خواجہ سعد رفیق، میاں جاوید لطیف نے دھواں دھار خطاب کیا جبکہ سعد رفیق نے تحریک انصاف اور نیب کو اتحادی قرار دیا اور کہا نیب جو کچھ میرے اور حمزہ شہباز کیساتھ کر رہا ہے وہ انسانیت ہے؟ نیب یہ سب کچھ پی ٹی آئی حکومت کی ایما پر کر رہا ہے۔

ذرائع کے مطابق سعد رفیق نے پارٹی رہنماؤں کی خاموشی پر بھی تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا جو نواز شریف کے نام پر ووٹ لیکر اس کیلئے نہیں بولے میرے لیے کیا بولیں گے؟ 

ذرائع کے مطابق میاں جاوید لطیف کا پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں کہنا تھا ن لیگ نواز شریف کی پارٹی ہے جس نے اس کا بیانیہ چھوڑا وہ رسوا ہوا۔ نواز شریف کی پارٹی کے فیصلے بھی نواز شریف ہی کریں گے، کسی اور کے فیصلوں کو تسلیم کرنے پابند نہیں ہیں۔ جاوید لطیف نے اجلاس میں گلہ کیا کہ بڑے بڑے فیصلے کرنے سے قبل ارکان کو اعتماد میں نہیں لیا جاتا۔