سندھ میں ایچ آئی وی ایڈز کے مزید مریض سامنے آ گئے

سندھ میں ایچ آئی وی ایڈز کے مزید مریض سامنے آ گئے


(24 نیوز) سندھ میں ایچ آئی وی ایڈز کے مزید مریض سامنے آگئے، بیس بچوں سمیت 28افراد کی رپورٹ مثبت آگئی، ادھر حکام کے مطابق بلوچستان میں ڈھائی سالوں کےدوران پانچ ہزار افراد ایڈز کا شکار ہوئے جبکہ ملتان میں بھی دوشہریوں میں ایڈز کی تصدیق ہوگئی۔

اندرون سندھ میں جان لیوا مرض ایچ آئی وی ایڈز کے حملے جاری ہیں۔ لاڑکانہ ٹریٹمنٹ سینٹر پر مزید 53افرادکے اسکریننگ ٹیسٹ ہوئے، بیس بچوں سمیت28 افرادکی کی رپورٹ مثبت آئی، ٹریٹمنٹ سینٹرپر رجسٹرڈ مریضوں کی تعداد2ہزار 424 ہوگئی جبکہ اب تک ایڈزمیں مبتلا 185رجسٹرڈمریض ہلاک ہوچکے ہیں۔مریضوں کو علاج معالجے کیلئے لاڑکانہ ٹریٹمنٹ سنٹر پرتو بلایا گیا لیکن وہ سہولیات کےفقدان کا شکوہ کرتے نظرآئے۔ سندھ ایڈز کنٹرول پروگرام کے ڈائریکٹر ڈاکٹر سکندر میمن کا کہنا ہے کہ رتو ڈیرو میں اتائی ڈاکٹر شہریوں میں بیماری بانٹ رہے ہیں۔

ادھربلوچستان میں سربراہ صوبائی ایڈز کنٹرول پروگرام ڈاکٹرممتاز مگسی کا کہنا ہے کہ ڈھائی سال کے دوران بلوچستان کے 32 اضلاع میں سروے کے مطابق 5 ہزار افراد ایڈز کا شکار ہیں۔ زیادہ کیسز کوئٹہ، ڈیرہ بگٹی، تربت، سبی، نصیر آباد میں سامنے آئے جبکہ ملتان میں 24گھنٹوں کے دوران 2شہریوں میں ایڈز کی تصدیق ہوئی ہے۔