جمعیت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق قاتلانہ حملے میں جاں بحق


راولپنڈی(24نیوز) جمعیت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق   قاتلانہ حملے میں جاں بحق ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق مذہبی سکالر اور ایک سیاسی جماعت کے سربراہ مولانا سمیع الحق پر قاتلانہ حملہ ہوا جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہوئے۔ ان پر قاتلانہ حملہ تھانہ ایئرپورٹ کے علاقہ میں کیا گیا۔

مولانا سمیع الحق کے صاحبزادے مولانا حامد الحق کا کہنا ہے گارڈز کچھ دیر کے لیے باہر گئے تھے اسی دوران مولانا سمیع الحق پر گھر میں حملہ ہوا،ان  کو چھریاں مار کر زخمی کیا گیا تھا، مولانا  شاہ احمد نے  مولانا سمیع الحق   کے  جاں بحق ہونے کی تصدیق کر دی ہے۔

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ  ڈاکٹر طاہر القادری نے مولانا سمیع الحق کی شہادت پر افسوس کا اظہار کیا ہے، جبکہ ایم کیوایم پاکستان کی جانب سے ڈاکٹرخالد مقبول صدیقی نے قاتلانہ حملے میں مولانا سمیع الحق کی شہادت پر ان کے  لواحقین سے تعزیت دلی ہمدردی و افسوس کا اظہار کیا، کارکنان کوصبر کی تلقین کی،  اور کہا کہ   مولانا سمیع الحق کی شہادت ایک قومی سانحہ ہے۔ ان کا کہنا  ہے کہ ایم کیوایم پاکستان مولانا سمیع الحق پرحملے کی شدید مزمت کرتی ہے۔

جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمد نعیم نے مولانا سمیع الحق پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی، شہادت پر غم ورنج کا اظہار کیا اور کہا کہ مولانا سمیع الحق پر حملہ عالم اسلام کیلئے بڑا سانحہ ہے،  مولانا سمیع الحق   کی نماز جنازہ آج آبائی علاقہ اکوڑہ خٹک میں سہ پہر 3 بجے ادا کی جائے گی۔

شازیہ بشیر

   Shazia Bashir   Edito