ہماری اسٹیبلشمنٹ سے ڈیل ہوگئی، رانا مشہود کے بیان پر فواد چودھری کاسخت ردعمل



رانامشہود احمد خان کا کہنا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ سے ڈیل ہوگئی، دو ڈھائی ماہ میں پنجاب میں حکومت ن لیگ کی ہوگی جس کے بعد فواد چودھری نے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ رانا مشہودکے کچھ بھی کہنے سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔

رانامشہوداحمدخان کے بیان پرفواد چودھری کاردِعمل آگیا, وزیرِ اطلاعات کا کہنا ہے کہ رانا مشہود کے بیانات کی کوئی اہمیت نہیں۔رانامشہود سے تھانیداروں اورپٹواریوں سے متعلق پوچھا جائے، رانا مشہودکے کچھ بھی کہنے سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔

خسرو بختیار:

اس موقع پر وفاقی وزیر منصوبہ بندی و ترقی مخدوم خسرو بختیار کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کو سی پیک فریم کا حصہ نہیں بنایا جا رہا ہے، سعودی عرب تیسرے فریق کے طور پر پاکستان میں سرمایہ کاری کررہا ہے۔خسرو بختیار نے کہا کہ چین کے ساتھ سی پیک کا دائرہ کار وسیع کیا جارہا ہے اور اس میں معاشی اور سماجی ورکنگ گروپس کو شامل کیا جا رہا ہے گذشتہ حکومت نے گوادر کی ترقی کے حوالے سے بہت باتیں کی تھیں، گوادر میں ابھی تک پینے کے پانی کی کوئی بھی سکیم موجود نہیں۔

سی پیک کے تحت 9 اقتصادی زونز میں سےایک بھی فنکشنل نہیں ہو سکا حکومت آئندہ 5 سال انسانی وسائل کی ترقی پر خصوصی توجہ دے گی۔مخدوم خسرو بختیار کا کہنا تھا کہ ایم ایل ون کی لاگت کو کم کرنے سے متعلق علم نہیں ہے، ترقیاتی منصوبے بلٹ آپریٹ ٹرانسفر پر شروع کریں گے۔

بلی کے خواب میں چھیچھڑے: خرم شیر زمان

پی ٹی ائی کراچی کے صدر اور رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے رانا مشہود کےپنجاب میں حکومت بنانے سے متعلق بیان کو بلی کے خواب میں چھیچھڑے قرار دے دیا، کراچی انصاف ہاوس میں رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے ضمنی انتخابات میں نامزد امیدواروں کے کے ہمراہ پریس کانفرنس کی ، خرم شیر زمان نے رانا مشہود کےپنجاب میں حکومت بنانے سے متعلق بیان کو بلی کے خواب میں چھیچھڑے قرار دیتے ہوئے کہا کہ تبدیلی آگئی ہے پنجاب میں حکومت تحریک انصاف کی رہے گی۔

خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان ضمنی انتخابات کی آگاہی مہم پر ناکام ہوگیا ہےعوام کو معلوم ہی نہیں کہ ضمنی الیکشن کیوں ہورہے ہیں پی ٹی ائی کے رہنماوں نے الیکشن کمیشن سے اپیل کے کہ ضمنی انتخابات میں عوام میں شعور بیدار کرنے کے لیے اگاہی مہم چلائیں۔

رانا مشہود کا بیان:

رانا مشہود کے بیان نے سیاسی بھونچال پیدا کردیا، انھوں نے کہاکہ  آنے والے دوڈھائی ماہ میں پنجاب میں پھر ہماری حکومت ہوگی  کیونکہ جو پی ٹی آئی کو پنجاب میں لائے تھَے وہ اب مایوس ہیں۔ رانامشہود کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کو لانے والوں کا اب خیال یہ ہے جنہیں وہ گھوڑے سمجھے تو وہ توخچر نکلے ۔ رانا مشہود کہتے ہیں آزاد ارکان بھی پی ٹی آئی والوں سے نالاں ہیں ، وہ اپنے علاقوں میں منہ دکھانے کے قابل نہیں رہے. اپنے وضاحتی بیان میں اُن کا یہ بھی کہنا تھا ڈیل کی کوئی بات نہیں مگر ادارے اپنے ہیں ان سے بات چیت میں کوئی قباحت نہیں  اورہماری بات چیت ہوتی رہتی ہے ۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔