حکومت نے بجلی چوری روکنے کیلئے مولویوں سے مدد مانگ لی

حکومت نے بجلی چوری روکنے کیلئے مولویوں سے مدد مانگ لی


اسلام آباد(24 نیوز)سینٹ کی قائمہ کمیٹی نے بجلی چوری روکنے میں اداروں کی ناکامی کا اعتراف کر لیا، اس سلسلے میں مساجد کے مولویوں سے بجلی چوری روکنے میں مدد کی اپیل کردی ہے۔

ضرور پڑھیں:ڈالر سستا ہوگیا

 تفصیلات کے مطابق سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے توانائی نے بجلی چوری روکنے میں متعلقہ اداروں کی ناکامی بعد مساجد کے مولویوں سے مدد لینے کا فیصلہ کیا ہے اور مساجد کے مولانا حضرات سے کہا ہے کہ وہ بجلی چوری روکنے میں مدد کریں۔ کمیٹی نے درخ٘واست کی ہے کہ مساجد کے مولوی اپنے خطبات میں بجلی چوری کے گناہ سے تائب ہونے پرعوام کو راغب کریں اور اس کے خلاف فتوے دیں۔

دلچسب بات یہ ہے کہ قائمہ کمیٹی نے زائد بل بھیجنے ، فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز کے نام سے عوام سے بھتہ وصول کرنے ، پی ٹی وی کی لائسنس فیس کے نام پر ہرصارف کے بل سے ہرماہ 35روپئے وصول کرنے ، اور بجلی کمپنیوں کی جانب سے گنجائش کے باوجو د مطلوبہ صلاحیت کے مطابق بجلی پیدا نہ کرنے ، پھر اس غائبانہ بجلی کو پید ا کرنے کی مد میں حکومت سے اربوں روپئے وصول کرنے ، اور شدید گرمی میں عوام کو طویل لوڈ شیڈنگ کے عذاب سے گزارنے جیسے معاملات پر مُکمل خاموشی اختیا ر کی ہے ۔