حافظ خادم رضوی اور چاہنے والوں کیلئے بری خبر ،سکیورٹی فورسز حرکت میں آگئیں


اسلام آباد( 24نیوز ) داتا دربار کے  باہر دھرنا دیے بیٹھے حافظ خادم حسین رضوی اور چاہنے والوں کیلئے بری خبر آگئی ہے،عدالت نے فیصلہ سنادیا، سکیورٹی فورسز حرکت میں آگئیں۔
انسداد دہشت گردی عدالت کے جج شاہ رخ ارجمند نے فیض آباد دھرنا کیس کی سماعت کی، پولیس نے تحریک لبیک کے سربراہ خادم حسین رضوی سمیت دیگر رہنماﺅں کی طلبی سے متعلق رپورٹ پیش کی۔پولیس نے رپورٹ میں بتایا ہے کہ خادم حسین رضوی کی طلبی کے اشتہار تھانہ نواں کوٹ ، ان کے آبائی چوک اور عدالت کے باہر چسپاں کر دئیے گئے ہیں،،عدالت نے ملزموں کی عدم حاضری پر خادم حسین رضوی، پیرافضل قادری ،مولانا عنایت اللہ اور شیخ اظہر کو اشتہاری قرار دے دیا۔

ایون فیلڈ ریفرنس:نواز شریف ،مریم نواز کو عارضی خوشخبری مل گئی
خادم حسین رضوی اور دیگر افراد فیض آباد دھرنے کے دوران توڑ پھوڑ اور تشدد کے الزام میں مقدمات درج ہیں،،پولیس کا کہناہے کہ مقدمات میں مزید کارروائی اب ملزمان کی غیر حاضری میں آگے بڑھائی جائیگی۔

تحریک انصاف کا بڑا کھڑاک،ایک ہی دن میں 3 وکٹیں اڑالیں
اسلام آباد کی انسداد دہشتگردی کی عدالت نے فیض آباد دھرنا کیس میں خادم حسین رضوی ،پیر افضل قادری ،مولانا عنایت سمیت دیگر رہنماوں کو عدم حاضری پر اشتہاری قراردے دیا ہے،تفتیشی آفسروں کا کہنا ہے کہ اب کارروائی ملزموں کی غیر حاضری میں ہوگی۔

مال روڈ پر تحریک لبیک کا احتجاجی دھرنا دوسرے روزبھی جاری ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔