گوجرانوالہ: کارڈیالوجی میں آپریشن سروس، ایمرجنسی میں کام شروع نہ ہوسکا

گوجرانوالہ: کارڈیالوجی میں آپریشن سروس، ایمرجنسی میں کام شروع نہ ہوسکا


  گوجرانوالہ (24نیوز) کارڈیالوجی میں آپریشن سروس اورایمرجنسی میں کام شروع نہ ہوسکا۔ ایڈیشنل انچارج نےپورازورلگاچھوڑا لیکن جب حکومت ہی سنجیدہ نہ ہوتوکچھ نہیں ہوسکتا۔

تفصیلات کے مطابق میٹرواوراورنج سروس بنانےوالی پنجاب حکومت صحت جیسی بنیادی ضروریات سے بے پرواہ ہے۔ اس کی ایک بڑی مثال وزیرآباد کارڈیالوجی اسپتال ہے۔جہاں ابھی تک ایمرجنسی اورآپریشن کی سروس کاباقاعدہ آغازنہیں ہوسکا۔ صوبائی حکومت بس تاریخ پرتاریخ دیئے جارہی ہے۔

 یہ بھی پڑھیں:پشاور: بڑے ہسپتالوں میں ڈاکٹرز کے لکھے  نسخے سمجھ سے باہر

 جناب آپریشن سروس کے آغازکے لیے 4 مختلف تاریخیں دی جاچکی ہیں لیکن کبھی مشنری میں تاخیرکا بہانہ اور کبھی فنڈزکی عدم دستیابی کارونا روکرٹال مٹول سے کام لیا جارہاہے۔ ایمرجنسی بھی مکمل طورپرفعال نہ ہوسکی۔وزیر آباد کارڈیالوجی اسپتال میں آپریشنز کے لیے جدید مشنری تونصب کردی گئی ہے لیکن تھیٹرکوابھی تک فنکشنل نہیں کیاجاسکا۔

اسپتال کے ایڈیشنل انچارج پروفیسر ڈاکٹر ثاقب شفیع نےکا کہنا ہےاسپتال میں ڈاکٹرز کے لیے بنیادی سہولیات ہی نہیں ہیں۔ جبکہ ایڈہاک ڈاکٹرز سے اسپتال میں ایمرجنسی سروس شروع نہیں کی جاسکتی۔