دہشتگردی کے خاتمے کا حل اس کیخلاف مقابلہ کرنا ہے: سینیٹر سراج الحق

دہشتگردی کے خاتمے کا حل اس کیخلاف مقابلہ کرنا ہے: سینیٹر سراج الحق


 پشاور(24نیوز): امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ زرعی تربیتی انسٹی ٹیوٹ پرحملہ پوری دنیا پرحملہ ہے۔ ایسےحملےکسی طور انسانیت نہیں، نہ کوئی غیرت ہے۔ خیبرٹیچینگ ہسپتال میں انسٹی ٹیوٹ حملے میں زخمیوں کی عیادت کےموقع میڈیا سےبات چیت کےدوران سراج الحق کا کہناتھا کہ حملے میں شہید شہداء پاکستان کے شہداء ہیں۔کسی بھی شخص کو بے گناہ قتل کرنا بہت بڑی گناہ ہے۔

امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ اسطرح کے وقعات سے عوام کے حوصلے پست نہیں کئے جاسکتے۔ یہاں کے پولیس کو لراج تحسین پیش کرتےہیں، سراج الحق کا کہنا تھا کہ فورسز اور پولیس کی قربانیوں کی وجہ سے امن یہاں آیا ہے۔ امن کو بحال رکھنے کیلئے پالیسی کو مزید بڑھانا ہونگا۔ ہمارے حوصلے اب بھی مضبوط ہیں۔ ہمارے پڑوس میں چھپے لوگ ہمارے ملک کو سبوتاژ کرنے کی ناکام کوشش کررہے ہیں۔ ہم اپنا دشمن جانتے ہیں۔ہمارےحوصلےک​وہ۔ہمالیہ سے زیادہ بلند ہے۔ پاکستان تا قیامت قائم رہنے کیلئے بناہے۔ ​سراج الحق نےکہا کہ ہم حق پریےہمارے ملک نےکسی ہرحملہ نہیں کیا۔ دہشتگردی کے خاتمے کا حل اس کیخلاف مقابلہ کرنا ہے۔ اس واقعے نے ہمیں بتا دیا کہ ہمیں ہر وقت یوشیاراور الرٹ رہنا ہونگا۔

یہ مسلہ سیاست کا نہیں ہم سب کو ملکر کھڑا ہونگا۔ انہوں نےکہاکہ ہمیں چاہیئے کہ ہم اپنے پلان مزید مضبوط کریں۔ ڈو مور کیلئے قوم مزید تیار نہیں جو ہوگیا کافی ہے۔ اس خطہ میں سارا انتشار امریکہ کی وجہ سے ہے امریکہ کی افغانستان سے جانے کیساتھ ہی یہاں امن آئے گا۔ انہوں نےکہا کہ وقت آگیاہے کہ امریکہ کو کہے کہ ہم ایک آزادملک ہے۔ ہمیں کسی کی ایڈوائس کی ضرورت نہیں۔ پاکستانی قوم ڈومورسننے کیلئےبھی تیارنہیں۔