ایس ایم ایس کی تاریخ۔۔۔

ایس ایم ایس کی تاریخ۔۔۔


لاہور ( 24 نیوز ) موبائل فون ایس ایم ایس 26 سال کاہوگیا، دنیا کا پہلا ایس ایم ایس 3 دسمبر 1992 کو بھیجا گیا  جس میں ’کرسمس‘ ٹائپ کیا گیا تھا،  تمام ترسہولتوں کے باوجود ایس ایم ایس کی اہمیت آج بھی برقرار ہے ۔

ایس ایم ایس یعنی شارٹ میسیج سروس، جس کا آغاز ہوئے آج 26 برس بیت گئے۔ دنیا کا پہلا ایس ایم ایس برطانیہ کی ایک ٹیلی کام کمپنی کے ملازم نیل پاپورتھ نے اپنی کمپنی کے ڈائریکٹر رچرڈ دیرواس کو ارسال کیا تھا۔ یہ میسج کمپیوٹر کے ذریعے ٹائپ کیا گیا تھا کیونکہ اس وقت تک ٹیلی فون میں کی بورڈ کی سہولت نہیں تھی ۔ 

صحیح معنوں میں ایس ایم ایس کی سروس 1994 میں اس وقت متعارف ہوئی جب نوکیا نے اپنا موبائل فون 2010 فروخت کے لیے پیش کیا جس میں کی بورڈ کی سہولت شامل کی گئی۔ رپورٹس کے مطابق دنیا بھرمیں صرف ایک روز میں 18.7 ارب تحریری پیغامات بھیجے جاتے ہیں۔

ایس ایم ایس کی سہولت نے دنیا کے مختلف کونوں میں بسنے والوں کے لیے ایک نیا اور نہایت تیزی سے کام کرنے والا مواصلاتی نظام فراہم کردیا۔ جس طرح لوگ کھانے، پینے اور دیگر معمولات زندگی کے بغیر نہیں رہ سکتے اُسی طرح اب صارفین ایس ایم ایس کے بغیر بھی زندگی کا تصور نہیں کر سکتے۔

ایس ایم یس یا مختصر پیغامات کا نوجوان لڑکے لڑکیوں کے تعلقات میں بہت عمل دخل بہت بڑھ گیا۔ جہاں عہدو پیماں سےبھرپور پیغامات کا تبادلہ ہوتا ہے۔ وہاں دل شکن اور جذبات کو مجروح کرنے والے پیغامات باہمی تعلقات کو خراب کرنے کا باعث بھی بنتے ہیں۔

مزید خبریں جانیئے: https://www.youtube.com/channel/UCcmpeVbSSQlZRvHfdC-CRwg/videos