عاصمہ قتل کیس میں اہم پیشرفت، مرکزی ملزم کا سہولت کار شاہزیب گرفتار


کوہاٹ (24 نیوز) ایک ہفتہ قبل بے دردی سے قتل کی جانے والی عاصمہ رانی کے کیس میں اہم پیشرفت۔ مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کے دوست شاہ زیب کو بھی گرفتار کر لیا۔ملز م کو ایک روزہ جسمانی ریمانڈ پرپولیس کےحوالے کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کوہاٹ پولیس نے مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کے دوست شاہ زیب کو بھی گرفتار کر لیا ہے اور اسے مقامی عدالت میں پیش کر کے ایک روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کر لیا ہے۔

متلعقہ خبر:قبائلی جرگہ کا عاصمہ کے قاتل کوعبرتناک سزا دینے کا مطالبہ

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم نے کئی مرتبہ مجاہد آفریدی کے کہنے پر عاصمہ کا پیچھا کیا تھا۔ملزم کوہاٹ ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کا رہائشی ہے۔ملزم کو پہلےسے گرفتارصادق اللہ کی نشاندہی پر گرفتار کیا گیا ہے۔ملزم نے مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کو بیرون ملک فرارہونےمیں مدد بھی فراہم کی تھی اور وہی اسے ایئرپورٹ تک لےگیا تھا۔ملزم شاہ زیب بطورسہولت کاراستعمال ہوتارہا۔عدالت میں پیشی کے بعد اسے پولیس کو ایک روزہ جسمانی ریمانڈ پر حوالے کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھئے: روشنیوں کے شہر میں اندھیر، 8 سالہ بچی سے زیادتی، ملزم فرار

واضح رہے کہ عاصمہ کی بہن صفیہ رانی نے جو ویڈیو جاری کی تھی اس میں انہوں نےکہا تھا  کہ عاصمہ جب بھی کالج جاتی تھی یا کہیں بھی جاتی مجاہد اپنے دوستوں کے ذریعہ اس کی نقل و حرکت پر نظر رکھتا تھا۔

علاوہ ازیں مجاہد آفریدی کے بھائی صادق آفریدی کو 4روزہ جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر عدالت نے جیل بجھوادیا۔قتل کیس کا مرکزی ملزم مجاہد آفریدی بیرون ملک فرار ہے جس کی گرفتاری تاحال عمل میں نہیں لائی جا سکی ہے ۔کیس میں مزید پیش رفت کی توقع کی جارہی ہے۔