نواز شریف فیملی کےخلاف تین نیب ریفرنسز پر 11ویں پیشی، دوگواہوں کے بیانات قلم بند


اسلام آباد(24نیوز)سابق وزیر اعظم نواز شریف فیملی کے خلاف تین نیب ریفرنسز پر 11 ویں پیشی ہوئی ،اسی طرح ان کی بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے خلاف نیب ریفرنسز پربھی سماعت ہوئی جس میں دوگواہوں کے بیانات قلم بند کیے گئے۔
تفصیلات کے مطابق نیب کورٹ کے جج محمد بشیر نے کیس کی سماعت میں سماعت میں نیب ریفرنسز ، گواہ محمد تسلیم کا بیان قلم بند کیا گیا ، عدالت میں گواہ کا کہنا تھا کہ ویلتھ ٹیکس ریکارڈ فراہم کیا، یہ ریکارڈ نواز شریف حسن نواز اور حسین نواز کا تھا، نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے گواہ کے بیان پر جرح بھی کی ،گواہ تسلیم خان جاتے ہوئے نواز شریف سے ہاتھ ملا کر گیا
ایون فیلڈ ریفرنس میں استغاثہ کے گواہ اسسٹنٹ ڈائریکٹر نیب زاور منظور کا بیان بھی قلمبند کیا گیا ، گواہ نے اپنے بیان میں بتایا کہ سدرہ منظور نے پیش ہو کر حدیبیہ پیپرز مل کا سالانہ آڈٹ ریکارڈ فراہم کیا ،میں نے بطور گواہ ریکارڈ پر دستخط کیے،کلرک محمد رشید نے 11 صفحات پر مشتمل دستاویزات جمع کرائیں ،چار صفحات پر مشتمل لندن کوئین بنچ کا حکم نامہ بھی جمع کرایا گیا، گواہ زاور منظور پر وکیل صفائی اور مریم نواز کے وکیل امجد پرویز دونوں نے جرح بھی کی ۔
عدالت نے کیس کی سماعت 9 جنوری تک ملتوی کرتے ہوئے 4 گواہان کو طلب کر لیا ، نواز شریف 11، مریم نواز 13 جبکہ کیپیٹن ریٹائرڈ صفدر 15 مرتبہ عدالت کے روبرو پیش ہوئے ۔

ویڈیو دیکھیں :