میرے ایٹم بم کا بٹن تم سے زیادہ بڑا اور طاقتور ہے،ٹرمپ کا کم جانگ کو کرارا جواب


واشنگٹن(24نیوز)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شمالی کوریا کے سپریم لیڈر کم جانگ ان کو ٹوئیٹ کا سخت جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ میرے ایٹم بم کا بٹن تم سے زیادہ بڑا اور طاقتور ہے۔
یاد رہے کہ کم جانگ ان نے سال نو کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ایٹمی بم کا بٹن ہر وقت میرے میز پر ہوتا ہے ،اور پورا امریکا شمالی کوریا کے نشانے پر ہے،ڈونلڈ ٹرمپ کا یہ بیان انکی ایک ٹوئٹ کے ذریعے منظر عام پر آیا ہے جس میں شمالی کوریا کو سخت جواب دیا گیا ہے۔


اہم بات یہ ہے کہ اس کے ساتھ ہی کم جونگ ان نے جنوبی کوریا کے لیے زیتون کی ایک مضبوط شاخ کی پیشکش کی جس کا مطلب یہ ہے کہ وہ مذاکرات کے لیے تیار ہیں۔
ٹوئٹر پر شمالی کوریا کے لیے صدر ٹرمپ کے انتہائی ذاتی پیغام سے قبل اقوام متحدہ میں امریکہ کی سفیر نکی ہیلی نے شمالی کوریا اور جنوبی کوریا کے درمیان مجوزہ مذاکرات کو”بینڈ ایڈ“' (ایک قسم کی مرہم پٹی) کہا تھا اور یہ کہا تھا کہ واشنگٹن کبھی بھی جوہری اسلحے سے لیس پیانگ یانگ کو قبول نہیں کر سکتا،بہرحال جنوبی کوریا نے شمالی کوریا کے رہنما کے پیغام کو مثبت انداز میں لیتے ہوئے نو جنوری کی تاریخ کو جزیرہ نما کوریا میں کشیدگی کم کرنے کے لیے نادر موقع قرار دیا تھا لیکن امریکہ نے ان مذاکرات کی سنجیدگی پر سوال کھڑا کر دیا ہے۔
بہرحال صدر ٹرمپ اور کم جونگ ان کے بیانوں پر لوگوں نے سوشل میڈیا پر تشویش ظاہر کی ہے کہ کس طرح جوہری ہتھیار کے حامل دو رہنما ایسی ہلکی باتیں کر سکتے ہیں۔
خیال رہے کہ اس سے قبل کم جونگ ان نے صدر ٹرمپ کو”احمق“یا'پیر فرتوت' کہا تھا جبکہ صدر ٹرمپ نے شمالی کوریا کے رہنما کو 'لٹل راکٹ مین' کہا تھا۔

ویڈیو دیکھیں :