حکومت کا فلاحی ریاست کی جانب ایک اور مثالی قدم



اسلام آباد( اویس کیانی) وزیر اعظم عمران خان ایک روزہ دورے پر فیصل آباد پہنچ گئے جہاں انہوں نے پناہ گاہ کا افتتاح کردیا،علامہ اقبال انڈسٹریل اسٹیٹ کا سنگ بنیاد رکھا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ایک فیصل آباد کےروزہ دورے کے دوران سی پیک کے پہلے انڈسٹریل زون کا سنگ بنیاد رکھ دیا اور انڈسٹریل میں پودا بھی لگایا، وزیر اعظم عمران خان نے شرکاء سے خطاب میں کہا کہ ہماری ریاست کا مقصد کمزور طبقے کو اوپر لانا ہے ،جانوروں سے انسان کا فرق کمزور طبقے کو سہارا دینا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کا کہناتھا کہ72سال سے ہم آزاد ہوئے ہیں مگر آج بھی ہر جگہ انگریزی میں تقاریر ہوتی ہیں، قومی اسمبلی میں تقاریرانگلش میں ہوتی ہیں اور میں یہ بھی جانتا ہوں وہاں کتنے لوگوں کو سمجھ آتی ہے، ہمیں اپنی قومی زبان اردو استعمال کرنا ہوگی ،چین نے بھی سب سے پہلے اسپیشل ایکسپورٹ زون بنائے تھے ، چین نے اسپیشل ایکسپورٹ زون کےذریعے اپنے لوگوں کو ٹریننگ دی، چین کی30سال میں 70کروڑ لوگوں کو غربت سےنکالنےکی مثال دنیا میں کہیں نہیں۔

اپنے ایک روزہ دورے کے دوران انہوں لاری اڈہ پر پناہ گاہ کا افتتاح کیا،وزیراعلیٰ عثمان بزدار  اور دیگر حکومتی شخصیات کے علاوہ پاکستان میں تعینات چینی سفیر بھی تقریب میں شریک ہوئے جبکہ گارمنٹ سٹی چئیرمین ریحان نسیم بھڑارا بھی شرکت کی، چئیرمین کاشف اشفاق نے وزیر اعظم کا والہانہ استقبال کیا۔

 علامہ اقبال انڈسٹریل سٹی 3217 ایکڑ پر مشتمل ہے،انڈسٹریل زون سے 400 ارب روپے کی سرمایہ کاری متوقع ہے، سرمایہ کاری کے لئے 160 کمپنیوں کے ساتھ ایم او یو پر دستخط ہوچکے ہیں،معاہدے کرنے والی 125 چینی کمپنیاں بھی شامل ہیں،علامہ اقبال انڈسٹریل سٹی میں ٹیکسٹائل،بلڈنگ کنسٹریکشن،آٹو موبائل،سٹیل،فارماسویٹکل انڈسری میں سرمایہ کاری ہوگی،انڈسٹریل زون سے 3 لاکھ ملازمیتیں ملیں گی،سرمایہ کاروں کے لیے ون ونڈو آپریشن سہولت فراہم کی جاری ہے۔

انڈسٹریل زون کا پہلا فیز 2021 میں مکمل ہوگا،ترکی ،کوریا،جاپان،یورپ سے سرمایہ کاری ہوگی،سرمایہ کاروں کے لیے بجلی گیس ٹیلی فون کی سہولت فراہم کی جارہی ہے،علاوہ ازیں وزیراعظم نے  لاری اڈہ پر پناہ گاہ کا افتتاح کیا اور اس کا جائزہ بھی لیا،پناہ گاہ جنرل بس اسٹینڈ کے قریب قائم کی گئی ہے،وزیراعظم نے پناہ گاہ میں کھانا بھی کھایا۔