امریکا نے بلوچستان لبریشن آرمی کو دہشت گرد تنظیم قرار دیا

امریکا نے بلوچستان لبریشن آرمی کو دہشت گرد تنظیم قرار دیا


واشنگٹن(24نیوز) امریکا نے بی ایل اے کو عالمی دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں ڈال دیا کر اس کے تمام اثاثے منجمد کردیئے. پاکستان نے امریکی فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے تمام دہشت گرد تنظیموں کے بیرونی اسپانسرز کو بھی انصاف کے کٹہرے میں لانے کا مطالبہ کیا ہے۔

بلوچستان لبریشن آرمی یعنی بی ایل اے دہشت گرد تنظیم ہے، امریکا نے مان لیا۔ امریکا نے بی ایل اے کو عالمی دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں ڈال دیا.  بلوچستان لبریشن آرمی کی تمام منقولہ اور غیرمنقولہ جائیدادیں اور اکاؤنٹس منجمد کردیئے گئے، دنیا بھر خاص طور پر امریکی عوام کو کہا گیا ہے کہ وہ بی ایل اے سے کسی قسم کا لین دین نہ کریں۔

امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں میں تسلیم کیا گیا ہے کہ بی ایل اے ایک مسلح علیحدگی پسند گروہ ہے جو پاکستان کے بلوچ اکثریتی علاقوں میں سکیورٹی فورسز اور عام لوگوں کو نشانہ بناتی ہے۔ امریکا نے بھی تسلیم کرلیا کہ بی ایل اے نے اگست 2018 میں چینی انجینئرز پر حملہ کیا۔یہ بھی تسلیم کرلیا گیا کہ نومبر 2018 میں کراچی کے چینی قونصلیٹ بھی بی ایل اے نے ہی کرایا۔ امریکا نے رواں سال گوادر میں پی سی ہوٹل پر حملے کی ذمہ دار بھی بی ایل اے کو قرار دیاہے۔

پاکستان نے امریکی فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ اب بی ایل اے کی دہشت گرد کارروائیوں میں کمی ہوگی، دفتر خارجہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بی ایل اے سمیت تمام دہشت گرد تنظیموں کے بیرونی اسپانسرز کو بھی انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔

بلوچستان لبریشن آرمی علیحدگی پسندوں کی پہلی جماعت تھی جسے 2006 میں پاکستان نے کالعدم قرار دیا تھا۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔