اقتدار کے آخری ماہ میں بھی حکومت ’’چونا‘‘ لگا نے سے باز نہ آئی

اقتدار کے آخری ماہ میں بھی حکومت ’’چونا‘‘ لگا نے سے باز نہ آئی


اسلام آباد(24نیوز) اقتدار کے آخری ماہ حکومت کے اخراجات اتنے بڑھ گئے کہ مرکزی بینک سے 11 کھرب روپے کا نیا قرضہ بھی اخراجات پورے نہ کر سکا، 104 ارب روپے کے نئے نوٹ چھاپنے پڑ گئے۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق مئی کے تین ہفتوں میں 10کھرب 97ارب 69کروڑ کے نئے قرضے لئے گئے۔ قرضوں کی واپسی اورادائیگیوں کے لئے حکومت نے 11ماہ میں 23کھرب 87ارب کے نئے قرضوں کا بوجھ چڑھا لیا۔ اگر پچھلے برس سے موازنہ کیا جائے تو یہ قرضے 161فیصد زیادہ ہیں۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:حمزہ علی عباسی اور ریحام خان کے درمیان سوشل میڈیا پر نئی جنگ چھڑ گئی 

 حکومتی اخراجات پھر بھی پورے نہ ہوئے تو ایک کھرب 40ارب سے زائد نئے نوٹ بھی چھاپ لئے۔ اس وقت مارکیٹ میں زیرگردش نوٹوں کا حجم 46 کھرب 25ارب،تاریخ کی بلند سطح پر پہنچ چکا ہے۔ حکومت نے 11 ماہ کے دوران 5کھرب 84ارب کے نئے نوٹ جاری کر کے افراط زر کو مزید بڑھا دیا۔