پاکستان پانی کی شدید قلت سے دوچار ہونیوالا ہے،جدیدتحقیق نے ہلا کر رکھ دیا

پاکستان پانی کی شدید قلت سے دوچار ہونیوالا ہے،جدیدتحقیق نے ہلا کر رکھ دیا


24 نیوز: پانی کے بغیرزندگی کاتصورناممکن لگتا ہے،ایک تحقیق کےمطابق آئندہ 7 سالوں میں پاکستان پانی کی شدید قلت سےدوچارہوسکتا ہے،قدرت کےاس حسین تحفےکاضیاع بےدردی سےجاری ہے،چھوٹی چھوٹی احتیاطوں سے اس انمول تحفےکی بچت کی جا سکیتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہم اپنےروزمرہ کےکاموں میں بہت سا پانی ضائع کردیتے ہیں۔جس کا ہم کواحساس ہی نہیں ہوتا۔دن بھرکےکاموں میں اگرہم تھوڑی سی احتیاط کرلیں توبڑی مقدارمیں پانی بچاسکتے ہیں۔ ٹوتھ برش کرنےکےدوران اگرکھلا نل ہم بندکردیں تواس سےہم 1 منٹ میں6 لٹرتک پانی کی بچت کرسکتے ہیں۔ نہاتےوقت اگرآپ صابن لگانےکے دوران نل یا شاوربندکردیں توپانی کی بڑی مقدارضائع ہونےسےبچ سکتی ہے۔صابن لگاتےاوربال شیمپوکرتےوقت شاوربند کرنےکی صورت میں آپ ہرمنٹ 17 لٹرپانی بچاسکتےہیں۔اورہاں ضرورت سےزیادہ دیرتک بھی نہ نہائیں۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:اقتدار کے آخری ماہ میں بھی حکومت ’’چونا‘‘ لگا نے سے باز نہ آئی 

 ٹوائلیٹ کوبطورکوڑے دان استعمال نہ کریں۔ کاٹن بڈز،ٹشوزاوراس طرح کی چیزیں ٹوائلٹ کےبجائےکوڑے دان میں پھینکیں۔ ایسا کرکےآپ تقریبا21 لیٹر پانی بچاسکیں گے۔ اگرآپ اپنی گاڑی کوپانی کےپائپ کی بجائےپانی بھری بالٹی سےدھوئیں تونہ صرف بہت زیادہ پانی کی بچت ہوگی بلکہ آپ کاگیراج بھی کم گندہ ہوگا۔ پانی میں دھونےکےبجائےاپنی سبزیاں کٹورے میں دھوئیں۔پانی اورتوانائی دونوں بچاتےہوئےسبزیاں کم سےکم پانی میں پکائیں۔

دھونےوالےبرتنوں پرپہلےسےپانی بہاناضروری نہیں۔اگربرتنوں پرسےبچےہوئےکھانےکوہاتھ سےکھرچ دیں گےتوکافی پانی بچ سکتاہے۔ واشنگ مشین کوکپڑوں سےبھرکردھونا زیادہ بہترہے۔کیوں کہ اگرمشین کوکم کپڑوں کےساتھ دھویا جائےگا توپانی کےساتھ ساتھ توانائی بھی زیادہ خرچ ہوگی۔ ان سب کےعلاوہ گھرمیں ٹپکتےنلوں اورپانی رستےدیگرآلات کی مرمت سےپانی کی بڑی مقداربچائی جاسکتی ہے۔جبکہ بارش کاپانی محفوظ کرکےبھی کئی طرح سےاستعمال میں لایا جاسکتا ہے۔