پولیس تشدد سے زخمی ملزم دم توڑ گیا،ورثا کا احتجاج

پولیس تشدد سے زخمی ملزم دم توڑ گیا،ورثا کا احتجاج


منڈی بہا الدین(24 نیوز)منڈی بہاءالدین کے علاقہ گوجرہ میں پولیس تشدد سے ہلاک ہونے والے نوجوان کی ہلاکت پر خواتین سمیت ورثا کا لاش سرگودھا گجرات روڈ پر رکھ کر پولیس کیخلاف احتجاجی مظاہرہ ،پولیس کیخلاف شدید نعرہ بازی کی نوجوان قیصر کو قادر آباد پولیس کے اہلکاروں نے تشدد کر کے مارا ۔ ڈی پی او ناصر سیال نے واقعہ کا نوٹس لے لیا .پولیس تشدد سے جانبحق ہونے والے نوجوان کے قتل کا مقدمہ اے ایس آئی ریاست ۔ سب انسپکٹر اور 7 اہلکاروں پر درج کر لیا گیا۔

منڈی بہاوالدین کے تھانہ قادرآباد کے علاقہ سجن کا رہائشی نوجوان قیصر کے بھاٸی کو دس روز قبل قادرآباد پولیس منشیات کیس کے شبہ میں گرفتار کرنے ان کے گھر آٸی تو مطلوبہ ملزم گھر پر نہ تھا جس پر اے ایس آٸی ریاست نے دیگر اہلکاروں کے ہمراہ قیصر سے تفتیش شروع کردی اور اسے گھر کے سامنے ہی تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ اس کے سر میں بندوقوں کے بٹ مارے اور حالت خراب ہونے پر وہیں پھینک کر چلے گئے۔ مقتول کے بھاٸی نے میڈیا کو بتایا کہ وہ قیصر کو پہلے ٹی ایچ کیو ہسپتال ملکوال پھر ڈی ایچ کیو منڈی بہاءالدین لے گئے  لیکن حالت تشویشناک ہونے پر ڈاکٹرز نے لاہور ریفر کردیا جہاں اس کی موت ہوگئی۔

مقتول کے ورثا نے گوجرہ میں سرگودھا روڈ بلاک کرکے احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین نے پولیس کیخلاف شدید نعرہ بازی کی خواتین نے سینہ کوبی کی ڈی پی او ناصر سیال نے واقعہ کو نوٹس لیتے ہوٸے گوجرہ پولیس کو ذمہ دار اہلکاروں کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دے کر ایس پی انویسٹیگیشن کو انکوائری افسر مقرر کر دیا ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer