سینیٹ الیکشن  میں ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے قانون سازی کرنا ہو گی: بلاول بھٹو


اسلام آباد (24 نیوز) چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ روکنے کے لئے قانون سازی کی ضرورت ہے۔ پیپلزپارٹی آئندہ عام انتخابات کے لیے بھر پور تیاری کر رہی ہے۔

اسلام آباد سپر مارکیٹ میں پارٹی کے رکنیت سازی کیمپ میں کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کارکن گھر گھر جا کر پارٹی کا پیغام پہنچائیں۔ عوام کو کوئی غرض نہیں کہ نواز کو کیوں نکالا۔ لوگ دہشت گردی، غربت، بے روزگاری کا خاتمہ اور مسائل کا حل چاہتے ہیں۔

متعلقہ خبر: سینیٹ الیکشن، ووٹرز کو 30،30کروڑ کے تحفائف دیئے گئے، شاہد شنواری

پارٹی چیئرمین نے واضح کیا کہ سینیٹ انتخابات میں ن لیگ حصہ لے رہی ہو تو وہاں ہارس ٹریڈنگ کا سوال تو اٹھے گا۔ ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے قانون سازی کرنا ہو گی۔ بلاول بھٹو زرداری نے نواز شریف کے غیر ملکی فرم کو ہائر کرنے کو ملکی سا لمیت کے خلاف قرار دیا۔

انہوں نے کہاکہ غیر ملکی کمپنی کو ملک کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ اگر نواز شریف نے غیر ملکی ڈیٹا کمپنی کو شہریوں کا ڈیٹا فراہم کیا ہے تو ہمیں اور ریاستی اداروں کوسوچنا ہو گا۔ رائے عامہ پر اثر انداز ہونے سے روکنے کے لیے غیر ملکی مداخلت کا راستہ روکنا ہو گا۔

یہ بھی پڑھئے: سینیٹ انتخابات، ن لیگ کے حمایت یافتہ امیدواروں کا پہلا، پی پی پی کا دوسرا نمبر

واضح رہے کہ اسلام اباد میں جاری رکنیت سازی مہم میں 8 سے زائد کیمپس لگائے گئے ہیں جن میں 5 ہزار سے زائد نئے کارکنوں کی رجسٹریشن ہو چکی ہے۔

مکمل تقریر کی ویڈیو: