طلباءمضرِ صحت پانی پینے پر مجبور

طلباءمضرِ صحت پانی پینے پر مجبور


 گوجرانوالہ( 24 نیوز )سرکاری سکولوں میں صاف پانی نایاب,گنداپانی پینے سےطلباء وطالبات  بیماریوں کاشکارہونے لگے۔

 صاف پانی کےبغیرزندگی کاتصورناممکن نہیں ہے، گوجرانوالہ کے سرکاری سکولوں میں صاف اور فلٹرپانی میسرنہیں ،گندا پانی پینے سے طلبہ مہلک بیماریوں کا شکار ہو رہے ہیں۔اسکول میں بچے اپنا مستقبل سنوارنےکےلئے آتے ہیں، جہاں ان کو زندگی میں مشکل حالات میں جینے اور کامیاب انسان بننے کے گرسکھائے جاتے ہیں، لیکن اسکولوں میں طلباء وطالبات جو پانی اپنے گلے میں اتارتے ہیں وہ پینے کے قابل نہیں ۔

کسی بھی سرکاری اسکول میں پینے کے صاف پانی کا فلٹرپلانٹ موجود نہیں ہے،بچے ٹوٹیوں سے گندا اور مضر صحت پانی پینے پرمجبور ہیں ،کچھ اساتذہ نے اپنی مدد آپ کے تحت واٹرپمپ لگوائےلیکن وہ بھی صاف پانی نہیں دیتے۔طالب علموں نے اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے کہ صاف پانی نہ ملنے کے باعث ہماری صحت کو شدید خطرات لاحق ہیں اس لئے صاف پانی کے لئے فلٹر پلانٹ لگائے جائیں۔