سابق وزیر اعظم نواز شریف کو ایک بار پھر عدالت پیش کردیا گیا


اسلام آباد( 24نیوز )سابق وزیر اعظم نواز شریف کو العزیزیہ اورفلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنسز کی سماعت کے سلسلے میں ایک بار پھر احتساب عدالت میں پیش کردیا گیا ہے، نواز شریف کو اڈیالہ جیل سے احتساب عدالت لایا گیا۔
احتساب عدالت نمبر 2 کے جج ارشد ملک نواز شریف کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت کر رہے ہیں،آج جب سماعت کا آغاز ہوا تو خواجہ حارث کے معاون وکیل عدالت میں پیش ہوئے اور آگاہ کیا کہ نواز شریف کے وکیل اسلام آباد ہائی کورٹ میں مصروف ہیں، جہاں ڈویڑن بنچ میں درخواست آج سماعت کے لیے مقرر ہے،جج محمد ارشد ملک نے استفسار کیا کہ ڈویژن بنچ میں سماعت کتنے بجے شروع ہوتی ہے؟ معاون وکیل نے جواب دیا کہ ہائی کورٹ کا ڈویڑن بنچ ساڑھے 11 بجے سماعت شروع کرتا ہے۔
جس پر احتساب عدالت کے جج نے معاون وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ پھر ہم ساڑھے 12 بجے تک سماعت میں وقفہ کر دیتے ہیں، آپ اس دوران خواجہ حارث سے پوچھ لیں کہ کیا وہ اس سے پہلے آسکتے ہیں۔جس کے بعد سماعت میں وقفہ کردیا گیا۔
مذکورہ کیس کی 30 اگست کو ہونے والی گزشتہ سماعت پر نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے پاناما جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیا پر جرح جاری رکھی تھی۔