حکومت نے صحت کے شعبہ میں بہتری لانے کیلئے بہت کام کیا ہے: سائرہ افضل

حکومت نے صحت کے شعبہ میں بہتری لانے کیلئے بہت کام کیا ہے: سائرہ افضل


اسلام آباد ( 24 نیوز) وفاقی وزیرقومی صحت سائرہ افضل تارڑ کا کہنا ہے کہ گزشتہ پانچ سالوں کے دوران حکومت نے صحت کی سہولتوں میں بہتری لانے اور ان میں اضافہ کے لیے ہر ممکن کوششیں کیں۔ اب ملک کی صحت کے شعبہ کی سیاسی قیادت پر لازم ہے کہ وہ ہیومن ریسوس ہیلتھ وژن میں پیش رفت کو یقینی بنائے۔

 24 نیوز ذرائع کے مطابق اسلام آباد میں نیشنل ہیومن ریسورس، 2018-30 ہیلتھ وژن کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر قومی صحت سائرہ افضل تارڑ نے کہا کہ موجودہ حکومت نے نیشنل ہیلتھ وژن 2025 کے لیے رابطہ کاری کی جو کہ صوبائی اور تمام علاقائی حکومتوں کو ساتھ لے کر چلنے کی بنیاد پر بنایا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے والے ذوالفقاربھٹو ہی تھے: بلاول بھٹو

 انکا کہنا تھا کہ نیشنل ہیلتھ وژن پائیدار ترقی کے اہداف میں ملک بھر میں تربیت یافتۃ ماہر صحت ورک فورس کی دستیابی میں بہتری لانا اورملک کے اندر صحت کے عملہ کی افرادی قوت کی بڑھتی ہوئی طلب کو پورا کرنے کے لیے ورک فورس کی تیاری پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔  2030 تک ملازمتوں کے نئے مواقع کی فراہمی اور سرکاری اور نجی شعبہ میں کام کے بہتر ماحول کی فراہمی بھی شامل ہے۔

پڑھنا مت بھولیں:نواز شریف اور شہباز شریف آپس میں الجھ پڑے، اختلافات بڑھنے لگے

انکا کہنا تھا کہ میڈیکل اور نرسنگ کی تعلیم کو جدید بنانا ہو گا ملک کوہیومن ریسوس ہیلتھ کے قابل اعتماد ڈیٹا اور تحقیق کی اشد ضرورت ہے. تقریب مین چاروں صوبوں اور گلگت بلتستان کے وزیر صحت نے بھی شرکت کی۔