کراچی میں گندگی کے ڈھیر

کراچی میں گندگی کے ڈھیر


کراچی(24نیوز) اربوں روپے خرچ کرنے کے باوجود کراچی کچرے سے پاک نہ ہوسکا ۔  شہر کے مختلف علاقوں، چوراہوں اور شاہراہوں پر کچرے کے ڈھیروں نے شہر کی خوبصورتی کو مانند کردیا ہے۔ انتخابات کے بعد منتؒخب ہونے والی قیادت شہر قائد کو کچرے سے پاک کرنا سب سے بڑا چیلینج ہوگا ۔

صاف پانی کی فراہمی، سیوریج کا ناقص نظام، گھنٹوں گھنٹوں لوڈ شیڈنگ شہر قائد کے سب سے بڑے مسائل ہیں  لیکن کچرے ڈھیر اور گندگی اس وقت کراچی کے شہریوں کو عذاب بن چکا ہے ۔شہر کا کوئی علاقہ، کوئی چوک اور کوئی شاہراہ گندگی سے پاک نہیں ۔شہری حکومت اور دیگر اداروں کے بڑے دعوے دعوے بھی دھرے کے دھرے رہ گئے ۔

پڑھنا مت بھولیں:  چائینہ سکیم ,پانی سے اٹھنے والا تعفن اہل علاقہ کیلئے سر درد بن گیا

الیکشن بھی گذرے گئے لیکن شہر قائد کچرے سے پاک نہ ہوسکا ۔ شہر سے کچرہ اٹھانہ کے لئے چینی کمپنی کو بھی ٹھیکہ دیا گیا، لیکن اس کی کارکردگی بھی تسلی بخش نہ رہی ۔تین دہائیوں بعد پہلی شہر قائد والوں نے اپنا میندیٹ کسی وفاقی جماعت کی جھولی میں ڈالا ہے اور تحریک انصاف شہر میں سب سے بڑی جماعت بن کر ابھری ہے۔ اب شہریوں کو امید ہے کے ایم کیو ایم اور تحریک انصاف وفاق میں ایک دوسرے سے تعاون کرنے کے بعد کراچی کے لئے کسی بڑے پیکیج کا اعلان کیا جائے گا ۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔