چیف جسٹس پاکستان کا دیامر میں سکولوں کو جلائے جانے کا نوٹس

01:52 PM, 4 Aug, 2018

وقار نیازی

اسلام آباد(24نیوز) چیف جسٹس ثاقب نثارنے گلگت دیامرمیں اسکولوں کو جلائےجانے کا نوٹس لےلیا۔ سیکرٹری داخلہ و  وزارت کشمیرافیئرزوگلگت بلتستان سے رپورٹ طلب کرلی۔ نگران وزیراعظم نے وزیراعلی گلگت بلتستان کوملزموں کے خلاف کارروائی کی ہدایت کردی۔

تعلیم کےدشمنوں اسکولوں کاآباد ہونا پھرناگوار گزرا۔ چلاس کے علاقے دیامر میں ایک دو تین نہیں بلکہ پورے تیرہ اسکولوں کوجلایا ،دھماکوں سے اڑایا۔انتظامیہ فوری حرکت میں آئی ۔ کارروائی میں سیکورٹی اداروں نے دس افرادکو حراست میں لے لیا۔

یہ بھی پڑھیں: عمران خان کے وزیر اعظم بننے میں دشواری، 7 اگست کو طلب
سیکورٹی اداروں نے اپنا فرض نبھایا توچیف جسٹس نے بھی واقعہ کا لیا فوری نوٹس لے لیا۔  رپورٹ طلب کرتے ہوئے سیکرٹری داخلہ و وزارت کشمیر افیئرزسے ہدایت کی کہ 48 گھنٹے میں آگاہ کیا جائے۔نگران وزیراعظم ناصرالملک نے وزیراعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمان کو فون کیا اورواقعے کی تفصیلات معلوم کیں۔وزیراعظم نے ہدایت کی کہ ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔
ترجمان گلگت بلتستان حکومت فیض اللہ فراق کاکہنا ہےکہ تعلیمی اداروں پر حملہ دیامر کے مستقبل پرحملہ ہے، دہشت گردوں کا نیٹ ورک جلدی توڑ دیں گے۔

مزیدخبریں