انتخابی ضابطہ اخلاق کیس،عمران خان کے وکیل کو اگلی سماعت پر دلائل کی ہدایت

انتخابی ضابطہ اخلاق کیس،عمران خان کے وکیل کو اگلی سماعت پر دلائل کی ہدایت


اسلام آباد(24 نیوز)الیکشن کمیشن نے عمران خان کے خلاف انتخابی ضابطہ اخلاق سے متعلق کیس کی سماعت ہائی کورٹ میں زیر سماعت ہونے کے باعث 18 دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے عمران خان کے وکیل بابر اعوان کو اگلی سماعت پر دلائل دینے کی ہدایت کر دی۔

تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں چار رکنی کمیشن نے عمران خان کے خلاف انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی سے متعلق کیس کی سماعت کی۔

عمران خان کے وکیل بابر اعوان الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے ، بابر اعوان نے موقف اختیار کیا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں ضابطہ اخلاق چیلنج کر رکھا ہے۔

ہائی کورٹ میں کیس 15 جنوری کو سماعت کے لئے مقرر ہے، چیف الیکشن کمشنر نے ریمارکس دیئے کہ کیا ہم تاریخوں کے پیچھے پیچھے بھاگتے رہیں گے۔

بابر اعوان نے کہا کہ نواز شریف کے خلاف کیس ہائیکورٹ اور سپریم کورٹ میں ہونے کے باعث غیر معینہ مدت تک ملتوی کیا گیا ہے جس پر الیکشن کمیشن نے معاملہ ہائیکورٹ میں زیرسماعت ہونے کے باعث ملتوی کرتے ہوئے بابر اعوان کو 18 دسمبر کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کیس پر دلائل دینے کی ہدایت کی۔

سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بابر اعوان کا کہنا تھا کہ کل پاکستان کے آئینی ادارے کے سربراہ نے کہا ریاست خطرے میں ہے، ریاست کو کوئی خطرہ نہیں ہے ، موجودہ حالات میں سیاست کو خطرہ ضرور ہو سکتا ہے۔

ن لیگی ارکان کے خلاف بھی این اے 120 میں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیوں کے کیسز کی سماعت 18 دسمبر تک ملتوی کر دی گئی۔

 ن لیگی رہنما کیپٹن صفدر، پرویز رشید، طلال چوہدری اور دیگر کے خلاف بھی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر نوٹس لیا گیا تھا۔