حکومت کاپارلیمنٹ کیلئے اخلاقیات کمیٹی بنانے کا فیصلہ

حکومت کاپارلیمنٹ کیلئے اخلاقیات کمیٹی بنانے کا فیصلہ


اسلام آباد(24نیوز) پارلیمنٹ میں ایک دوسرے کی ذات پر کیچڑ اچھالنے کا سلسلہ روکنے کی حکومتی تیاریاں شروع ہیں ، حکومت کی جانب سے پارلیمنٹ کے لئے اخلاقیات کمیٹی بنانے کا حتمی فیصلہ کرلیاگیا۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے پارلیمنٹ میں ایک دوسرے کی ذات پر کیچڑ اچھالنے کا سلسلہ روکنے  کے لئے اخلاقیات کمیٹی بنانے کا حتمی فیصلہ کیا ہےیہ کمیٹی رواں ماہ بنائی جائے گی،  جس میں اپوزیشن اور حکومتی ارکان کو برابر کی نمائندگی دی جائےگی، اخلاقیات کمیٹی میں پارلیمانی لیڈروں کو بھی  شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ اخلاقیات کمیٹی کو غیر پارلیمانی گفتگو پر متعلقہ ارکان کے خلاف کارروائی کا اختیار ہوگا، وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ روز اجلاس میں اخلاقیات کمیٹی کے فیصلے کی توثیق بھی کردی،اسپیکرقومی اسمبلی اسد قیصر اور وزیر پارلیمانی امور علی محمد کو قوائد و ضوابط بنانے کی ذمہ داری دےدی گئیں ہے۔

علاوہ ازیں اخلاقیات کمیٹی ارکان پارلیمنٹ کو ایک دوسرے کی ذات پر حملوں کے بجائے صرف ایشوز پر بات کرنے کی پابند بنائے گی، اخلاقیات کمیٹی گالم گلوچ اور ذات پر حملے کی صورت میں خود کارروائی اور اسپیکر کو سفارش کرسکے گی جبکہ قومی اسمبلی ، سینیٹ اورپارلیمانی امور کی وزارت ایس او پی بنائیں گے۔