فاٹا انتخابات کے انعقاد میں بڑی رکاوٹ سامنے آگئی۔۔۔

فاٹا انتخابات کے انعقاد میں بڑی رکاوٹ سامنے آگئی۔۔۔


24نیوز: فاٹا کی صوبائی نشستوں پر بروقت انتخابات کے انعقاد میں بڑی رکاوٹ سامنے آگئی، فاٹا کی صوبائی نشستوں پر بروقت انتخابات کروانے کے لیے پارلیمنٹ کو الیکشن ایکٹ 2017 میں ترمیم کے لیے قانون سازی کرنی پڑے گی.

فاٹا کی صوبائی نشستوں پر انتخابات بروقت ہوسکیں گے یا نہیں یہ فیصلہ پارلیمنٹ کو قانون سازی سے کرنا پڑے گا، ذرائع الیکشن کمیشن کے مطابق فاٹا کی صوبائی نشستوں پر انتخابات کے حوالے سے الیکشن ایکٹ 2017 میں پارلیمنٹ کو ترمیم کرنا پڑے گی یا پھر آرڈینینس کے ذریعے صوبائی نشستوں پر انتخابات بروقت کرائے جا سکتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن کو فاٹا کی 6 ایف آرز کو ایک صوبائی حلقہ بنانے میں رکاوٹ درپیش ہے، الیکشن کمیشن فاٹا کی حلقہ بندیوں کا ابتدائی ڈرافٹ بھی تیار نہ کر سکا، الیکشن ایکٹ 2017 میں 6 ایف آرز پر مشتمل ایک قومی اسمبلی کا حلقہ بنایا گیا تھا مگر الیکشن ایکٹ 2017 میں فاٹا کی ایف آرز کو صوبائی اسمبلی کا حلقہ بنانے کا قانون موجود نہیں، الیکشن کمیشن کو فاٹا کی حلقہ بندیوں ابتدائی ڈرافٹ 31 اکتوبر تک تیار کرنا تھا.

وقار نیازی(Waqar Niazi)

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔